dushwari

تازہ ترین خبر:

کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے شواہد سامنے آنے پر شام میں حملے کئے جائیں گے،فرانسیسی صدر

پیرس۔14فروری2018(فکروخبر /ذرائع ) فرانس کے صدر ایمانویل ماکرون نے کہا ہے کہ شامی حکومت کی طرف سے اپنے شہریوں کیخلاف کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے شواہد سامنے آنے پر شام میں ان مقامات کو نشانہ بنایا جائے گا جہاں سے یہ کیمیائی حملے کئے گئے یا جہاں ان کی منصوبہ بندی کی گئی۔غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق بد ھ کو فرانسیسی صدر ایمانویل ماکرون نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ شامی حکومت کی طرف سے اپنے شہریوں کیخلاف کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے شواہد سامنے آنے پر شام میں ان مقامات کو نشانہ بنایا جائے گا

جہاں سے یہ کیمیائی حملے کئے گئے یا جہاں ان کی منصوبہ بندی کی گئی۔انہوں نے کہا کہ تاحال فرانس کی مسلح افواج کے پاس ایسا کوئی ثبوت موجود نہیں کہ شامی صدر بشارالاسد نے اپنے شہریوں کیخلاف ممنوعہ کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا ہے،ان کی اولین ترجیح دہشتگردوں کیخلاف کارروائی ہے ،تاہم شامی حکومت کی طرف سے اپنے شہریوں کیخلاف کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے شواہد سامنے آنے کے بعد وہ شام پر حملوں کا حکم دینے میں کوئی دیر نہیں کریں گے۔انہوں نے کہا کہ شام کی حکومت کو باالاخر عالمی انصاف کے سامنے جواب دہ ہونا پڑے گا۔انہوں نے اس موقع پر شام کی صورتحال پر غور کیلئے اجلاس بلانے کا مطالبہ بھی کیا اور کہا کہ ان کے پاس اس حوالے سے کئی تجاویز بھی موجود ہیں تاہم انہوں نے ان تجاویز کی تفصیل نہیں بتائی۔

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES