dushwari

امریکہ میں گھٹیا ممالک سے لوگ کیوں آ رہے ہیں،امریکی صدر کی ہرزہ سرائی

ٹرمپ نسل پرست ہیں ، ہیلری کلنٹن برہم ،امریکی صدر کا بیان شرمناک،حیران کن اور نسل پرستانہ ہے ،اقوام متحدہ 
جو کچھ ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا وہ نسل پرستانہ ہے ،اس سے پہلے کسی امریکی صدر نے ایسی زبان استعمال نہیں کی ،سینیٹر ڈربن 

واشنگٹن۔13جنوری2018(فکروخبر/ذرائع) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے تارکین وطن کیخلاف ہرزہ سرائی کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمارے ملک میں گھٹیا ممالک سے لوگ کیوں آ رہے ہیں ۔تارکینِ وطن کے حوالے سے معاہدے پر بات چیت کے لیے ڈیموکریٹ اور ریپبلیکن ارکانِ کانگریس نے صدر ٹرمپ کے دفتر میں ان سے ملاقات کی تھی۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے غصے میں تارکینِ وطن کے خلاف نازیبا الفاظ استعمال کیے ہیں جس کے بعد اقوامِ متحدہ کے ترجمان نے صدر ٹرمپ کی مذمت کرتے ہوئے ان کے الفاظ کو حیران کن، شرمناک اور نسل پرستانہ قرار دیا ہے۔امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ کے مطابق صدر ٹرمپ کا ارکانِ کانگریس سے بات کر کے کہنا تھا کہ امریکہ کو ناروے جیسے ممالک سے تارکینِ وطن لینے چاہیے۔

اخبار کے مطابق صدر ٹرمپ نے کہا کہ ہمیں ہیٹی سے مزید افراد کی کیوں ضرورت ہے؟ انھیں باہر نکالو۔ادھر وائٹ ہاوس کے ترجمان راج شاہ کی جانب سے جاری کیے گئے بیان میں کہا گیا ہے کہ واشنگٹن میں کچھ سیاستدان دوسرے ممالک کے مفادات کے لیے لڑتے ہیں جبکہ صدر ٹرمپ ہمیشہ امریکی لوگوں کے لیے لڑیں گے۔اقوامِ متحدہ کے انسانی حقوق کے ترجمان روپرٹ کولوائل نے کہا ہے کہ اگر یہ حیران کن اور شرمناک بیان امریکی صدر کی جانب سے دیا گیا ہے تو معاف کیجیے گا یہ سراسر نسل پرستی ہے۔امریکی صدر نے تارکینِ وطن کے حوالے سے ہونے والے مذاکرت کے دوران کانگریس ممبران سے استفسار کیا کہ ہمارے ملک میں ان گھٹیا ممالک سے لوگ کیوں آ رہے ہیں۔بتایا جا رہا ہے کہ صدر ٹرمپ ہیٹی، ایلسیلواڈور اور افریقی ممالک کے بارے میں یہ الفاظ استعمال کیے ہیں۔وائٹ ہاؤس کی جانب سے صدر ٹرمپ کے اس بیان کی تردید بھی سامنے نہیں آئی ہے۔تاہم صدر ٹرمپ نے موقف اختیار کیا ہے کہ انھوں نے کسی کے لیے توہین آمیز زبان استعمال نہیں کی ہے۔امریکی صدر نے ٹوئٹر پر جاری کیے گئے ایک بیان میں کہا ہے کہ انھوں نے سخت زبان استعمال کی تھی لیکن جو کچھ ان کے ساتھ منسوب کیا جا رہا ہے وہ درست نہیں ہے۔دوسری جانب ڈیموکیٹک سنیٹر ڈک ڈربن نے کہا ہے کہ صدر ٹرمپ نے نسل پرستانہ زبان استعمال کی ہے اور انھوں نے کچھ افریقی ممالک کو گھٹیا کہا تھا۔سنیٹر ڈک ڈربن کا ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ انھوں جو صدر ٹرمپ کو کہتے سنا ہے وہ نہیں سمجھتے کہ اس سے پہلے کسی امریکی صدر نے ایسی زبان استعمال کی ہو۔ادھر ہیلری کلنٹن امریکی صدر ٹرمپ کے ہیٹی اور افریقی ممالک کے خلاف تحقیر آمیز بیان پر پھٹ پڑیں اور کہا کہ ٹرمپ نسل پرست ہیں جبکہ ٹرمپ اس بات کو مسترد کرچکے ہیں کہ انہوں نے کسی قسم کا کوئی نازیبا بیان نہیں دیا ہے ۔ہیٹی میں آنے والے تباہ کن زلزلے کے 8سال مکمل ہونے پر ہیلری کلنٹن نے اپنے ٹوئٹ میں کہا اس سانحے کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا اور جس طرح سے ہیٹی کے عوام نے اس کا مقابلہ کیا اسکی مثال نہیں ملتی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ سانحات سے نمٹنے کے لیے امریکا کی جانب سے ہمسایہ ممالک کی ہمیشہ مدد کی جاتی رہی ہے۔

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES