dushwari

فتح اللہ گولن کی امریکہ سے اغوائی کے منصوبہ کی خبر بے بنیاد:ترکی

ترکی :13؍نومبر2017(فکروخبر/ذرائع)انقرہ حکومت نے اتوار بارہ نومبر اُن خبروں کی تردید کی ہے جن کے مطابق ترک حکام نے لاکھوں ڈالر ادا کر کے جلاوطن ترکفتح اللہ گولن کو اغوا کرنے کا منصوبہ بنایا تھا۔ جمعے کے روز امریکی اخبار وال اسٹریٹ جرنل نے اپنی ایک رپورٹ میں کہا تھا کہ ترک حکام اور امریکا کی قومی سلامتی کے سابقہ مشیر مائیکل فلین اور ان کے بیٹے کے درمیان 15 ملین ڈالر کے عوض فتح اللہ گولن کو جبراﹰ انقرہ حکومت کے حوالے کرنے سے متعلق بات چیت کی تفتیش کی جا رہی ہے

۔امریکی سی آئی اے کے سابق سربراہ جیمز وولزی نے انکشاف کیا تھا کہ فتح اللہ گولن کو زبردستی ترکی بھجوانے کا ڈیڑھ کروڑ ڈالر کا ایک منصوبہ بنایا گیا تھا۔امریکی اخبار وال سٹریٹ جرنل کے مطابق مائیکل فلن نے گولن کو نجی طیارے سے امرالی جزیرے میں قائم جیل منتقل کرنے پر بات چیت کی تھی۔ اخبار نے مزید کہا ہے کہ اس حوالے سے فلن کو رقم کی پیشکش بھی کی گئی تھی۔واشنگٹن میں قائم ترک سفارت خانے نے ان خبروں کو من گھڑت قرار دیا ہے۔ ترک حکومت گزشتہ برس ہونے والی ناکام فوجی بغاوت کا الزام فتح اللہ گولن پر عائد کرتی ہے۔

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES