dushwari

لو جہاد کے نام پر ایک شخص کو زندہ جلا دیا گیا

راجستھان :07؍ڈسمبر2017(فکروخبر/ذرائع)راجستھان کے راج سمندر علاقہ سے لو جہاد معاملہ کی سنسنی خیز اور دل دہلادینے والے واردات کی ایک ویڈیو منظر عام پر آئی ہے ،لو جہاد کے نام جس نوجوان کو تشدد کرکے زندہ جلادیا گیا اس شخص کا نام محمد بھٹہ بتایاجا رہا ہے ،غنڈوں نے پہلے اسے مارا پیٹا اور صرف جلایا نہیں بلکہ ظالموں نے اس کا ویڈیو تک بنالیا ،یہ واقعہ راج نگر کے راج سمند علاقہ کی دیو ہیریٹیج روڈ پر پیش آیا،پولس کو پہلے اطلاع ملی کہ ایک نوجوان کا آدھ جلا جسم ملا ہے۔

اعلی پولس حکام ایس پی منوج کمار، اے ایس پی منیش ترپاٹھی، ڈی ایس پی راجیندر سنگھ موقع پر پہنچے اور انہوں نے وہاں پر انتہائی خراب حالت میں ایک لاش کو دیکھا۔ اسی وقت ڈاگ اسکویڈ اور فورنسک جانچ کی ٹیم طلب کی گئیں۔ پولس نے واردات کی جگہ کے آس پاس کے لوگوں سے لاش کو شناخت کرنے کے لئے کہا تو پتہ لگا کہ جو شخص ویڈیو میں جل رہا ہے اس کا نام محمد بھٹہ شیخ ہے۔ پولس پورے معاملے کی جانچ کر رہی ہے۔کھیتی باڑی میں استعمال اوزار جو واردات قتل میں استعمال کئے گئے اور مرحوم کی بائیک اور چپل موقع واردات سے ملے ہیں۔ اندازہ لگایا جاتا ہے کہ مٹی کا تیل چھڑک کر نوجوان کو جلانے کی کوشش کی گئی۔ اسی دوران ایک ویڈیو سامنے آیا ہے جس میں شمبھو ناتھ راجگر نامی ایک شخص محمد بھٹہ شیخ کو پیٹتے ہوئے نظر آ رہا ہے۔ ویڈیو میں صاف نظر آرہا ہے کہ پہلے اس شخص کو کھیتی باڑی کے اوزار سے مارا گیا پھر اس پر مٹی کا تیل چھڑک کر جلاد یا گیا۔اس ویڈیو میں شمبھو ناتھ راج گر کو یہ کہتے سنا جا رہا ہے کہ جو لو جہاد میں شامل ہوگا اس کا یہی حال کیا جائے گا۔ یہ خبر ایک ٹی وی چینل پر تفصیل سےچل رہی ہے۔واضح رہے یہ پہلا معاملہ نہیں ہے ، راجستھان میں ماب لنچنگ اور لو جہاد کے معاملے مستقل بڑھ رہے ہیں اور حکومت ان سب معاملوں میں پوری طرح ناکام نظر آ رہی ہے۔

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES