dushwari

جی آر فاضلی

حج اسلام کا ایک ایسا بنیادی رکن ہے جو اخلاقی ، معاشرتی ، اقتصادی ، سیاسی ، قومی و ملی زندگی کے ہر پہلو پر حاوی ہے اور مسلمانوں کی عالمگیر اوربین الاقوامی حیثیت کا سب سے بلند معیار ہے۔حج کا اجتماع عالمگیر سطح کا ہوتا ہے جس میں تمام دنیا سے دین متین کے پیروکار جمع ہو کر اللہ کی وحدانیت اور اس کی ربوبیت میں کسی کے شریک نہ ہونے کا اقرار کرتے ہیں۔یہ عظیم الشان سالانہ اجتماع مرکز اسلام مکہ المکرمہ میں خدا کے گھر سامنے منعقد ہوتا ہے کہ جہاں سے حق و سچائی کا چشمہ ابلا اور اس نے دنیا کو سیراب کیا خدا کا یہ گھر روحانی علم و معرفت کا وہ مطلع ہے جسکی کرنوں نے روئے زمین کے ذرے ذرے کو درخشاں کیا۔

عطاء الرحمن نوری ۔مالیگاؤں

خطبۂ حجۃ الوداع کواسلام میں بڑی اہمیت حاصل ہے۔خطبۂ حجۃ الوداع بلاشبہ انسانی حقوق کااوّلین اورمثالی منشوراعظم ہے۔اْسے تاریخی حقائق کی روشنی میں انسانیت کاسب سے پہلامنشورانسانی حقوق ہونے کااعزازہے۔اس منشورمیں کسی گروہ کی حمایت کوئی نسلی،قومی مفادکسی قسم کی ذاتی غرض وغیرہ کاکوئی شائبہ نظرتک نہیں آیا۔ ذی قعدہ ۱۰؍ہجری میں آقاﷺنے حج کاارادہ کیا،یہ حضورﷺ کا پہلااورآخری حج تھا۔ اسی حوالے سے اسے \"حجۃ الوداع\"کہاجاتاہے۔

یہ فیضان نظر تھا یا کہ مکتب کی کرامت تھی؟

عبد العزیز

حضرت ابراہیم ؑ اور حضرت اسمٰعیل ؑ کی قربانیوں کا فلسفہ اور حقیقت کو وہی اچھی طرح سے سمجھ سکتا ہے جس نے سچے دل سے اسلام قبول کیا ہے اور اخلاص اور صدق دل سے اسلام کے اصولوں کے مطابق زندگی گزارتا ہے اور دوسروں کو اسلام کے مطابق زندگی گزارنے کی دعوت دیتا ہے۔ جو لوگ دین کی باتوں سے نابلد ہوتے ہیں یا بے دین ہوتے ہیں ان کی سمجھ سے یہ چیز بالاتر ہے کہ بھلا کوئی باپ اپنی ضعیفی اور بڑھاپے میں اپنے اکلوتے بیٹے کی قربانی دینے کیلئے محض خواب میں یہ دیکھ کر تیار ہوجائے گا کہ اپنے بیٹے کو ذبح کررہا ہے۔

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES