dushwari

مولانا محمد عبداللہ مغیثی

کسی زبان یاعلم میں بذات خود کوئی قباحت نہیں ۔ اللہ کے چاہنے اوراس کی مرضی سے سب زبانیں وجودمیں آئی ہیں اورہرزبان میں اسکانام لیاجاتاہے ،اس کی کبریائی اورحمدوثنا کی جاتی ہے۔ اگرانسان خیر پسند ہے تو اس کی زبان اوراس کے علوم پرخیر پسندی کی روح چھائی ہوئی ہوتی ہے اوراگروہ شرپسند ہے تو اس کی زبان اور اسکے علوم بھی اپنے اندراسی قسم کی فضا رکھتے ہیں یا دوسرے الفاظ میں کہ ہرعلم اپنے ساتھ ایک تہذیب بھی رکھتاہے ،اگر ان زبان وعلوم کو اس تہذیب سے الگ کرلیا جائے تووہ خالص علمی چیز ہوگی ۔

ڈاکٹر مظفر حسین غزالی

دہلی، این سی آر کو گزشتہ کئی دنوں سے دھول، دھویں 'دھند' نے ڈھک رکھا ہے۔ اسی کے ساتھ ہوا میں گھولے زہر کو لے کر بحث جاری ہے۔ این جی ٹی نے دہلی میں پھیلی ہوائی کثافت کو روکنے کیلئے فوری اقدامات کرنے کو کہا ہے، جس میں دس سال پرانے ٹرکوں کی دہلی آمد پر پابندی، پی ایم 10 کی مقدار جہاں بھی 600 مائکرو گرام فی مربع میٹر ہو وہاں پانی کا چھڑکاؤ اور دھواں پیدا کرنے والی صنعتی یونٹس کو 14 نومبر تک بند کرنا شامل ہے، تو لیفٹیننٹ گورنر نے کھلے میں ہو رہے تعمیری کاموں کو روکنے کا حکم دیا ہے۔

حفیظ نعمانی

شاید دنیا کا یہ اکیلا ایسا مسئلہ ہے جس پر ہر دن ایک نیا بیان آجاتا ہے اور ہر دن ایک نیا لیڈر اپنی تجویز بغل میں دبائے سامنے آجاتا ہے۔ یہ بات پہلی بار کب کہی گئی اور کس نے کہی اس کا ذکر تو کوئی کرتا نہیں لیکن آزادی کے بعد سب سے پہلے بابری مسجد میں ہی مورتیاں رکھ کر یہ کہا گیا کہ بابر کے زمانہ میں ان کے صوبیدار میرباقی نے رام مندر کو توڑکر یہ مسجد بنائی تھی۔ مورتیاں رکھنے اور انہیں وہاں سے ہٹانے، اس مسجد میں سرکاری تالا ڈالنے اور تالا کھولنے کا جو ڈرامہ بھی ہوا ہو لیکن حقیقت یہ ہے کہ مسجد میں اذان اور نماز اس دن سے بند ہوگئیں جس دن اس میں سرکاری تالا ڈالا گیا۔ اور 06 دسمبر 1992 ء میں مسجد ہی باقی نہیں رہی۔

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES