dushwari

تسلیم خان

وزیر اعظم نریندر مودی نے اتوار کو گجرات کا دورہ کیا۔ اس مہینے یعنی اکتوبر میں یہ ان کا تیسرا گجرات دورہ تھا۔ ویسے اس سال گجرات میں ان کا یہ نواں دورہ تھا۔ ان دوروں میں انھوں نے متعدد افتتاحی پروگرام، سنگ بنیاد اور منصوبوں کا اعلان کیا۔ تصور کیا جا رہا ہے کہ گجرات انتخابات کی تاریخوں کا اعلان ہونے سے پہلے شاید وزیر اعظم کا یہ آخری دورہ تھا۔ لیکن سوال یہ ہے کہ آخر وزیر اعظم بار بار گجرات جا کیوں رہے ہیں؟ یہ بات تو سمجھ میں آتی ہے کہ ان کا دورہ انتخابی پالیسی کا حصہ ہے، لیکن اس قدر بے چینی اور بے تابی کیوں؟ جواب کے لیے کچھ باتوں پر غور کرتے ہیں۔

محمد ظہور مصباحی

اسلام ایک جامع دین ہے ۔یہ وہ واحد دین ہے جس نے تربیت کا آغاز بچے کی پیدائش سے بھی پہلے کیا ہے ۔ایک صحابی نے رسول اللہ ﷺسے اپنے چھوٹے بچے کی تربیت کے لیے ہدایات کی درخواست کی تو آپ نے فرمایا: بچے کی عمر کیا ہے؟ اس پراس صحابی نے جواب دیا: ایک سال۔ رسول اللہ ﷺفرمایا:تم نے بہت دیر کر دی۔یعنی جنین میں جب روح پھونک دی جاتی ہے تو وہ اپنی ماں سے براہ راست اور ارد گردکے ماحول سے بالواسطہ متاثر ہوتا ہے ۔اس کی تائید آج کی سائنس بھی کر رہی ہے۔ یہ حقیقت واضح رہے کہ اولاد اللہ تعالی کی طرف سے ایک ایسا عطیہ ہے جس کے بارے میں پوچھا جائے گا۔

ہاشمی رضا مصباحی 

مذہب اِسلام نے ہمیشہ اپنے ماننے والوں کو اتحاد اور اجتماعیت کا درس دیا ہے۔ دین اسلام میں اختلاف کو ناپسند کیا گیا ہے۔ اسلام نے ہمیشہ مسلمانوں کو اختلاف اور تفرقہ سے روکا ہے۔ اللہ تعالی قرآن شریف میں فرماتا ہے (ترجمہ): ’’اللہ کی رسّی کو تم سب مضبوطی سے پکڑے رہو۔‘‘ دوسری جگہ ارشاد فرماتا ہے: ’’اللہ اور اس کے رسول کی اطاعت کرو اور آپس میں اختلاف مت کرو کہ تم کمزور ہو جاؤ، اور تمہاری ہوا نکل جائے، اور صبر کرو۔ بیشک اللہ صبر کرنے والوں کے ساتھ ہے۔‘‘

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES