dushwari

گیتا پانڈے بی بی سی نیوز، پونے

ایک بھارتی ڈاکٹر لڑکیوں کو بچانے کے لیے انوکھے مشن پر ہیں وہ اپنے ہسپتال میں ایسی حاملہ خواتین سے زچگی کی کوئی فیس نہیں لیتے جن کے ہاں بچی کی ولادت ہوتی ہے۔ڈاکٹر گنیش راکھ کا کہنا ہے کہ ایسے ملک میں جہاں روایتی طور پر لڑکوں کو ترجیح دی جاتی ہے لڑکیوں کے حوالے سے صورتحال کو بہتر بنانے کے لیے یہ ان کی ایک ادنٰی سی کوشش ہے۔سنہ 1961 میں بھارت میں سات سال سے کم عمر ہر 1000 لڑکوں کے لیے 976 لڑکیاں تھیں۔ جبکہ 2011 کی مردم شماری کے مطابق اب یہ تعداد کم ہو کر 914 رہ گئی ہے۔ڈاکٹر گنیش نے سنہ 2007 میں مغربی بھارت کے شہر پونے میں ایک چھوٹا سا ہسپتال شروع کیا۔

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES