dushwari

عار ف عزیز

 آزادی سے قبل ہندوستان کی پانچ سو باسٹھ ریاستوں میں، صرف بھوپال ریاست کو یہ اعزاز حاصل ہوا کہ یہاں کی دو سو چار سالہ تاریخ میں چار بیگمات نے یکے بعد دیگرے ڈیڑھ سو سال تک کامیابی کے ساتھ حکومت کی ذمہ داری نبھائی اور تاریخ کے صفحات پر اپنا نقش چھوڑ دیا۔
اس سلسلہ کی پہلی بیگم ماجی ممولا تھیں، جنہوں نے ۱۷۴۲ء سے حکومت کے نظم ونسق میں پورا دخل دیا، وہ ریاست کی باقاعدہ حکمراں تو نہیں تھیں، لیکن اپنے شوہر نواب یار محمدخاں کے انتقال کے بعد ان کے دو کمسن جانشینوں کیلئے وہ کار بار حکومت چلاتی رہیں، بلکہ جب تک حیات رہیں ان کے اثر ورسوخ میں کمی نہیں آئی،

محمد اکرم ظفیر

میانمار کے مظلوم مسلمان جس کربناک دور سے گزر رہے ہیں اس قسم کی انسانیت سوز تصویر ماضی کی تاریخ پیش کرنے سے قاصر ہے.ننھے منے معصوم بچوں کو رسی سے باندھ کر برماء فوجیں جس طرح کی بربریت کا اظہار کر رہی ہیں اور جو تصویریں ابھر کر سوشل میڈیا پہ آرہی ہیں انہیں دیکھ کر کلیجہ منہ کو آجاتا ہے.میانمار سے لاکھوں روہنگیاں مسلمانوں کی نقل مکانی کا ایسا ہولناک سلسلہ جاری ہے جسے بیان کرتے ہوئے آنکھیں اشکبار ہوجاتی ہیں.دل کانپ اٹھتا ھے،زبان تھم سی جاتی ھے.

از نتانہ جے ڈیلونگ باس

تاریک راتوں میں اکثر اوقات چمگادڑوں کی پھڑپھراہٹ انسان کو خوف زدہ کردیتی ہے۔شاید اسی لیے کئی فلمی مناظر میں، خاص طورپر جادو اور آسیب پر مبنی فلموں میں خوف کے تاثر کوابھارنے کے لیے چمگادڑوں سے کام لیاجاتاہے۔اور یہ تصور تو دل دل دہلا دینے کے لیے ہی کافی ہے کہ چمگادڑوں کی ایک قسم ایسی بھی ہے جو صرف خون پی کر زندہ رہتی ہے۔خون پینے والی چمگادڑیں زیادہ تر امریکہ، میکسیکو،برازیل ، چلی اور ارجنٹائن میں پائی جاتی ہیں اور وہ صرف جانوروں کا ہی خون نہیں چوستیں بلکہ سوتے ہوئے انسانوں پر بھی حملہ کرتی ہیں۔

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES