dushwari

ریاض عظیم آبادی

اتر پردیش اور ممبئی کے سبھی اسکولوں میں وندے ماترم گانا لازمی قرار دیا ہے۔سوریہ نمسکار کے بعد اب وندے ماترم تھوپنے کی تیاری کی جا رہی ہے ہمارے بچوں کو جان بوجھ کر ’شرک‘ کا گنہگار بنایا جا رہا ہے۔در اصل یہ ملک کے بھگوا کرن کی سازش کا ایک مضبوط ترین حصہ ہے۔بنکم چند آر ایس ایس بھاجپا کے ہیرو ہو سکتے ہیں لیکن ہم اسے کسی بھی حالت میں اپنا نہیں سکتے۔بنگلہ زبان کے مصنف کے ناول آنند مٹھ سے بندے ماترم کو لیا گیا ہے۔

از:عطاء الرحمن نوری 

مجاہد آزادی مولانا سید کفایت علی کافیؔ مرادآبادی (شہادت ۲۲؍رمضان ۱۲۷۴ھ/ ۶؍مئی ۱۸۵۸ء)عالم وفاضل اور بہترین طبیب وشاعر تھے۔شاہ ابوسعید مجددی رامپوری سے آپ نے درس حدیث لیا اور مشہور شاعر ذکیؔ مرادآبادی (شاگرد امام بخش ناسخؔ ) سے فن شاعری سیکھا۔۱۸۴۱ء میں حج وزیارت کی سعادت حاصل کی جس کی یادگار ’’تجمل دربار رحمت‘‘ہے۔اس کے علاوہ آپ کی کئی تصانیف ہیں۔مثلاً:ترجمہ شمائل ترمذی (منظوم)، مجموعۂ چہل حدیث (منظوم)مع تشریح، خیابان فردوس،بہار خلد،نسیم جنت، مولود بہار، جذبۂ عشق اور دیوان کافیؔ ۔

ڈاکٹر عادل ریتون

مشرق و مغرب میں اسلامی فتوحات کی سرگرمیوں کا مطالعہ کر نے والا اس بات سے بخوبی واقف ہوگا کہ ان فتوحات کو اپنی خصوصیات کی وجہ سے ایک انفرادی حیثیت حاصل ہے ۔ مثال کے طور پر چند خصوصیات یہ ہیں ۔(۱) مسلمان فاتحین نے مفتوحہ ملکوں کی زمین اور اس کے باشندوں کا احترام کیا 145ان فتوحات کی آڑ میں کسی بھی طرح کی کوئی تخریب کاری نہیں کی، نہ ہی کسی کے ساتھ لوٹ مار کی ۔

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES