dushwari

شکیل اعظمی 

روزہ کا مقصد انسان کے اندر ضبط نفس کی قوت پیدا کرنا ہے ، جس کو قرآن مجید کی اصطلاح میں’’تقویٰ ‘‘کہتے ہیں۔چنانچہ اللہ تعالیٰ کا ارشاد ہے ’’اے ایما ن والو تم پر روزے فرض کئے گئے جیسا کہ تم سے پہلے امم سابقہ پر روزہ فرض تھا‘‘۔روزہ سے ضبط نفس پیدا ہونے کا سبب یہ ہے کہ بنیادی طور پرگناہ کے پیدا ہونے کے سبب تین ہیں ،زبان،پیٹ اور نفسانی خواہشات ۔روزہ کے ذریعہ زبان پر روک لگائی جاتی ہے کہ روزہ دار کوئی خلاف شرع بات نہ کہے،جھوٹ نہ بولے غیبت نہ کرے،کسی پر تہمت نہ لگائے وغیرہ ۔ اگر روزہ کی حالت میں کوئی ایسا گناہ کیا جائے جس کا تعلق زبان سے ہے تو گرچہ قانونی اعتبار سے اسکا روزہ ٹوٹتا نہیں ہے لیکن روزہ دار اسکے اجر وثواب سے محروم ہو جاتا ہے۔اس سلسلے میں اللہ کے رسول ﷺ ارشاد فرماتے ہیں کہ جو شخص روزہ رکھ کر گالی،گلوج ، غیبت ،چغلی اور جھوٹ کا مرتکب رہتا ہے اللہ تعالیٰ اس کے روزہ کی پرواہ نہیں کرتا۔

حافظ محمد ہاشم صدیقی مصباحی

) اللہ کا شکرہے کہ رمضان المبارک آگیا ،اللہ کی رحمتیں برسنا شروع ہو گئیں۔رحمت عالم ﷺ نے فرمایا:رمضان ا لمبارک کے لئے جنت سال بھر سجائی جاتی ہے اور رمضان المبارک کی پہلی رات کو عرش کے نیچے سے مشیرہ(اشارہ کرنے والی) نامی پاکیزہ ہوا چلتی ہے جو جنت کے درختوں کے پتوں اور دروازوں کے حلقو ں سے لگے ہوئے گزرتی ہے ، جس سے ایک دلکش آواز پید ا ہوتی ہے کہ سننے والوں نے ایسی شیریں (میٹھی) آواز کبھی نہیں سنی ہے۔ یہ آواز سن کر جنت کی حوریں جنتی بالا خانوں ( Balcony) میں کھڑی ہوجاتی ہیں۔ اس وقت یہ حوریں آواز دیتی ہیں کہ کون ہے جو اللہ سے ہماری درخواست کرے کہ اللہ تعالیٰ ہمارا نکاح اس روزہ دار سے کرادے۔ پھر وہ رضوان الجنہ سے دریافت کرتی ہیں کہ یہ کون سی رات ہے؟وہ جواب دیتا ہے کہ یہ رمضان المبارک کی پہلی رات ہے کہ اس مہینہ میں امت محمدیہ کے روزہ داروں کے لئے جنت کے دروازے کھول دیئے گئے ہیں۔

نہال صغیر 

دنیا اس وقت تیسری جنگ عظیم کے دہانے پر ہے ۔کسی بھی وقت کسی بھی ملک کی ذرا سی انانیت کی وجہ سے جنگ کا مہیب دیو عالم انسانیت کیلئے بھیانک تباہی لاسکتا ہے ۔جن لوگوں کے دماغوں میں پہلی اور دوسری جنگ عظیم کی تباہی کے مناظر محفوظ ہیں وہ سمجھ سکتے ہیں کہ موجودہ جنگ کیا تباہی لاسکتی ہے ۔پہلی اور دوسری جنگ عظیم جس نے لاکھوں نہیں کروڑوں انسانوں کو نگل لیا تھا ۔دوسری جنگ عظیم جس میں امریکہ نے اپنی درندگی تاریخ میں رقم کروالی اس نے جاپان کے دو شہروں کو موت کی وادی میں بدل دیا تھا ۔جبکہ آج اس سے بھی کئی گنا زیادہ طاقتور ایٹم بم تیار ہو چکے ہیں۔چین اور شمالی کوریا کا تنازعہ جس میں امریکہ کے غروراور توسیع پسندانہ عزائم کو بڑا دخل ہے ،علاقے میں کشیدگی کا سب سے بڑا سبب ہے ۔دوسرا چین امریکہ کے درمیان نئے سوپر پاور بننے کی دوڑ نے بھی جنگ کے امکانات میں اضافہ کیا ہے ۔اس کے علاوہ چین پاکستان کے ساتھ مل کر ہندوستان کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کرتا رہتا ہے ۔

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES