dushwari

راج شیکھرپاٹل اشٹور

شریمتی اندراگاندھی بھارت کی پہلی خاتون وزیر اعظم ہیں ، جوجنوری1966کو اس وقت وزیراعظم منتخب ہوئیں جبکہ ’’تاشقند سمجھوتہ ‘‘ کے لئے گئے اس وقت کے وزیر اعظم ہند جناب لال بہادر شاستری روس گئے ہوئے تھے ۔ ان کاوہاں اچانک ہی انتقال ہوگیاجس کی بناپر اندراگاندھی کو وزیر اعظم بنایاگیا۔ بعدازاں کانگریس ورکنگ کمیٹی (CWC)میں پارلیمانی کمیٹی کے لیڈر کے عہدے کے لئے باضابطہ انتخابات ہوئے ۔ اندراگاندھی نے مرارجی دیسائی کو ہر اکر پارلیمانی کمیٹی کے لیڈرکاعہدہ حاصل کیا۔ اور وزیر اعظم ہند منتخب ہوئیں۔ اس طرح انہوں نے دنیا کی دوسری خاتون وزیر اعظم بننے کااعزاز بھی حاصل کرلیا۔ دنیا کی پہلی خاتون وزیر اعظم بننے کااعزاز سیلون (سری لنکا) کی کی ’’سری ماؤ بھنڈاری نائیکے‘‘ کو حاصل ہے ۔ 

از:سمیع احمدقریشی،ممبئی 

سماج میں نوجوانون کی تعداد اوروں سے زیادہ ہوا کرتی ہے۔اوروں کے مقابلہ میں سماج میں نوجوانوں کا وجود انتہاہی اہمیت کا حامل ہوا کرتا ہے۔ ان میں سوچنے سمجھنے اور کام کر نے کی طاقت اوروں سے زیادہ ہوا کرتی ہے۔نوجوانوں میں معیاری فکر وعمل کی بناء پرایک مثبت سماج کی تشکیل ہوا کرتی ہے۔نوجوانوں میں مثبت فکر وعمل کا ہونا ضروری ہے۔ہمارا ملک ہندوستان کی گنگا جمنی تہذیب ہے۔یہاں کثرت میں وحدت ہے فرقہ وارانہ ہم آہنگی،قومی یکجہتی ہمارے ہندوستانی تہذیب کا پرانا اثاثہ ہے۔

ڈاکٹر سید احمد قادری 

ایسا لگتا ہے کہ مرکز اور دیگر کئی ریاستوں میں برسراقتدار بھارتیہ جنتا پارٹی کے لوگوں میں پورے ملک کی سیات اور اقتدار پر قبضہ جمانے کے لئے جھوٹ پر جھوٹ بولنے کی ہوڑ لگی ہوئی ہے ۔ بھارتیہ جنتا پارٹی اور اس کی حکومت میں شامل وزراء میں اس بات کو لے کر زبردست مقابلہ ہے کہ کون سب سے زیادہ جھوٹ بول کر ملک کے عوام کو بیوقوف بنا سکتا ہے ۔ 
ایک طرف بی جے پی کے لوگ اس بات پر عوامی سطح پر فخر اور دعویٰ کرتے نظر آتے ہیں کہ ساڑھے تین سال کی مدت میں بھاجپا حکومت میں ’ایک بھی‘ کرپشن کا معاملہ سامنے نہیں آیا ۔ گزشتہ 16 ستمبر 17ء کو جھارکھنڈ کے رانچی شہر میں بی جے پی کے قومی صدر امت شاہ نے اپنی ایک پریس کانفرنس میں کہا تھا کہ’ تین سال کی ، ان کی پارٹی کی حکومت میں حزب مخالف ایک بھی کرپشن کا الزام نہیں لگا سکی ہے۔

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES