dushwari

کھجور : امراضِ قلب اور دیگر بیماریوں سے بچنے کا راز

عبير طائل

کھجور قدرت کا ایک انمول تحفہ ہے جو اپنی کثیر لذت کے علاوہ بے شمار غذائی فوائد سے بھرپور ہے۔ کھجور انسانی اعضاء بالخصوص دل کے لیے انتہائی مفید ثابت ہوتی ہے۔ صحت کے امور سے متعلق ویب سائٹDaily Health Post کے مطابق دنیا بھر میں کھجور کے طبّی فوائد کے حوالے سے ہونے والے تحقیقی مطالعوں انسانی صحت کے لیے درجِ نتائج سامنے آئے ہیں :
1۔ شریانوں کے سکڑنے سے حفاظت
ایک نئی طبی تحقیق کے مطابق روزانہ کھجور کھانے سے انسان شریانوں کے سکڑ جانے سے محفوظ رہتا ہے جو دل کے دورے کا اولین سبب ہے۔ یاد رہے کہ شریانوں کا سکڑنا خون میں ضرر رساں کولیسٹرول کی سطح بلند ہونے کا نیتجہ ہوتا ہے۔ روزانہ 100 گرام کھجور مسلسل 4 ہفتوں تک کھائی جائے تو اس سے جسم کے اندر Triglyceride کی سطح میں تقریبا 15% کی کمی واقع ہوتی ہے۔ اس کے علاوہ خون میںFat Oxidation کے عمل میں بھی 33% کے قریب کمی آتی ہے۔

2۔ بلند فشار خون میں کمی
امریکی کی ہارورڈ یونیورسٹی میں ہونے والی ایک طبی تحقیق کے مطابق کھجور بلند فشار خون کو کم کرنے والی غذاؤں میں سے ہے۔ اس حوالے سے ماہرین بہتر نتائج کے لیے ہر ہفتے کھجور کی 220 گرام مقدار کھانے کی ہدایت دیتے ہیں۔
3۔ دل کے دوروں سے بچاؤ
کھجور کو پوٹاشیئم کا اچھا ذریعہ شمار کیا جاتا ہے جو اپنے طور پر دل کی صحت کے لیے ایک اہم عنصر ہے۔ غذائی ماہرین کے مطابق روزانہ 100 گرام کھجور کھانے کی صورت میں جسم کو مطلوب پوٹاشیئم کی یومیہ مقدار کا 20% حاصل ہو جاتا ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق جو خواتین روزانہ 3200 ملی گرام پوٹاشیئم لیتی ہیں ان میں دل کے دوروں کی شرح تقریبا 21% کم ہو جاتی ہے۔
4۔ "اینیمیا" سے حفاظت
کھجور فولاد سے بھرپور ہوتی ہے اور یہ خون میں ہیموگلوبن کا ایک بنیادی ذریعہ ہے۔ یہ بات سب جانتے ہیں کہ فولاد کی کمی Anemia کا سبب بنتی ہے۔ لہذا روزانہ کی بنیادوں پر کھجور کھانے سے انسانی جسم کو فولاد کی مطلوبہ مقدار حاصل ہو جاتی ہے جو بالخصوص بچوں اور حاملہ خواتین کو اینیمیا سے محفوظ رکھ سکے۔ یاد رہے کہ کھجور کے ہر 100 گرام میں تقریبا 0.9 ملی گرام فولاد پایا جاتا ہے۔
5۔ قبض کا علاج
کھجور کو نظامِ ہضم کے منظّم رکھنے کے واسطے ایک مؤثر عامل شمار کیا جاتا ہے۔ یہ پوٹاشیئم اور ریشوں سے پُر ہوتی ہے جو قبض کا علاج ہیں اور نظام ہاضمہ کو بہتر بناتے ہیں۔
6- معدے کے السر کا علاج اور اس سے حفاظت
کھجور کو کئی صدیوں تک معدے کے السر کے علاج کے طور پر استعمال کیا گیا۔ سال 2005 میں جاری ایک تحقیق میں بتایا گیا کہ کھجور نظام ہضم میں السر کے نتیجے میں جنم لینے والے انفیکشن کوکم کرنے کی قدرت رکھتی ہے.. بلکہ تحقیق میں یہاں تک کہا گیا کہ کھجور کھانا اس سلسلے میں متعلقہ دوا سے زیادہ کارگر ثابت ہوتا ہے۔
7۔حاملہ خواتین کے لیے بچوں کی ولادت کے عمل میں آسانی
سال 2011 میں طبی جریدے Journal of Obstetrics and Gynecology میں شائع ہونے والی ایک تحقیق کے مطابق جو حاملہ خواتین پیدائش کے مقررہ وقت سے قبل 4 ہفتوں تک روزانہ 6 کھجوریں کھاتی ہیں اُن کو ولادت کے عمل میں کھجور نہ کھانے والی خواتین کے مقابلے میں بہت آسانی کا سامنا ہوتا ہے۔
8۔ سرطان سے بچاؤ
کھجور میگنیشیئم سے بھرپور ہوتی ہے جو انسانی جسم کے مدافعتی نظام کو طاقت دیتا ہے۔ میگنیشیئم انسانی جسم میں انفیکشن پیدا ہونے سے روکتا ہے جو بنیادی طور پر کئی امراض بالخصوص سرطان کی کئی اقسام کی اہم وجہ ہے۔ سال 2015 میں ایک برطانوی تحقییق جریدے British Journal of Nutrition میں شائع ہونے والی تحقیق کے مطابق کھجور کھانے سے معدے اور بڑی آنت کے سرطان کے امکانات کم ہو جاتے ہیں۔
9۔ مردوں کی تولیدی صلاحیت میں اضافہ
سال 2015 میںPakistan Journal of Biological Sciences میں شائع ہونے والی ایک طبی تحقیق کے مطابق دو ماہ تک روزانہ تقریبا 120 گرام کھجور کھانے سے مردوں میں تولیدی صلاحیت قابل ذکر حد تک بہتر ہو جاتی ہے۔
10۔ انسانی جسم اور دماغ کو توانائی کی فراہمی
کھجور گلوکوز ، فرکٹوز اور سکروز جیسی سادہ شوگر سے بھرپور ہوتی ہے۔ جو اسے انسانی جسم میں توانائی پیدا کرنے کی انتہائی تیز رفتار "بیٹری" بنا دیتی ہے۔ غذائی ماہرین کھلاڑیوں کو ہدایت کرتے ہیں کہ وہ کھیل اور ورزش سے قبل اور بعد میں ایک سے دو کھجوریں ضرور لیں۔ اس طرح جسم کو مطلوب ضروری توانائی فراہم ہو جائے گی۔ اس کے علاوہ کھجور انسانی دماغ کو یادداشت مضبوط بنانے اوریکسوئی میں اضافے کے لیے مطلوب توانائی بھی دیتی ہے۔ لہذا بچوں اور نسیان کے مرض میں مبتلا عمر رسیدہ افراد کی غذا میں کھجور کو ضرور شامل کیا جانا چاہیے۔

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES