dushwari

شیخ متین

دین اسلام تمام انسانوں کے لیے ایک مستند ، فطری اور قابل عمل نظام زندگی اور دنیا و آخرت کی فلاح و کامرانی کا واحد ذریعہ ہے۔ دعوت دین مسلمانوں کا منصبی فریضہ ہے۔ ملک کے مجموعی حالات ایک ایسے متبادل نظامِ زندگی کا تقاضہ کررہے ہیں جو انسانوں کے لیے امن و سکون ، عزت و عظمت اور ترقی و نجات کا ضامن ہو۔ حقیقت یہ ہے کہ یہ متبادل نظام زندگی صرف ’’اسلام‘‘ ہی ہے۔ 

محمد وصی صدیقی

جہاں تک تحریک خلافت کی تاریخ کا سوال ہے دیکھنے میں آیا ہے کہ اکثر مصنفین و مؤلفین اس پرسرسری گذر گئے اور جس نے کچھ لکھا بھی تو تاریخ اور سنہ تک موجود نہیں۔ البتہ گاندھی جی کی زندگی پر بہت کچھ لکھا گیا جس سے کافی مدد ملتی ہے کیونکہ ۱۹۱۸ء ؁ سے ۱۹۲۵ء ؁ تک گاندھی جی کی زندگی اور تحریک خلافت ایک ہی دھاگے میں پروئے ہوئے ہیں۔ اسلامی خلافت کا تصور اتنا ہی پرانا ہے جتنا کہ اسلام کا۔ لیکن آج وہ ایک بھولا ہوا سبق ہے۔

اداراتی تحقیقی مضمون

آزاد ہندوستان کے دستور میں اقلیتوں کو مذہب پرعقیدہ ، مذہب پر عمل مذہب کی تبلیغ کی اجازت دی گئی ہے ۔ بدقسمتی سے آزادی کے بعد بعض حلقوں سے اس بات کی ناروا کوشش ہونے لگی کہ مسلمانوں کو ان کے مذہبی تشخص سے محروم کردیا جائے ۔ اسی پس منظر میں ۱۹۷۲ ؁ء میں آل انڈیا پرسنل لاء بورڈ کی تشکیل عمل میں آئی ۔ (مسلم پرسنل لاء بورڈ کام اور پیام صفحہ نمبر : ۱۰ مرتب: سید الیاس ہاشمی ندوی )

اجتماع گاہ میں تاحد نگاہ عامۃ المسلمین کا جم غفیر ۔ 
چلچلاتی دھوپ کی پروا کئے بغیر شہریوں کی شرکت ۔آخری دن مالیگاؤں سمٹ گیا ۔ 

مالیگاؤں : (مختار عدیل )شہر کے دیانہ شیور علاقے میں ہونے والے ضلعی اجتماع کے دوسرے او ر آخری روز عصر کی نماز کے بعد ۱۸۱؍ نکاح عمل میں آئے ۔ اجتماع کی پنڈال کی اولین صفوں میں نوشہ انتہائی سادگی کے ساتھ اپنے سر پرست ، والدین ، احباب اور شواہدین کے ساتھ موجود تھے ۔

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES