Live Madinah

makkah1

dushwari

دوحہ:07؍ڈسمبر2017(فکروخبر/ذرائع):قطرنے امریکی صدر کی جانب سے سفارتخانے کی منتقلی کے اعلان کو فلسطین میں قیام امن کی کوششوں کے لئے موت کا پروانہ قرار دے دیا ہے، امریکی صدر کے اس اقدام کی وجہ سے خطے میں افراتفری اور خطرناک صورت حال پیدا ہوگی۔ٹرمپ نے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارلحکومت تسلیم کر کے مسلمانوں کے خلاف طبلِ جنگ بجا دیا,الجزیرہ ٹی وی کے مطابق قطر کے وزیر خارجہ شیخ محمد بن عبدا لرحمان الثانی نے کہا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دینے کا اعلان ان لوگوں کے لئے ڈوب مرنے کا مقام ہے جو خطے میں قیام امن کے خواہش مند ہیں۔

سعودی عرب حکومتوں کی تبدیلی کی پالیسی پر عمل پیرا نہیں،قطر حالتِ انکار کے رویے کو تبدیل کرے،گفتگو

ریاض۔9نومبر2017(فکروخبر/ذرائع )سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے کہا ہے کہ قطر ی تنازع بہت چھوٹا معاملہ ہے اور یہ کوئی بحران نہیں ہے ۔ہمیں اس سے بڑے مسائل درپیش ہیں۔ان میں انتہاپسندی اور دہشت گردی ، ایران کا جارحانہ رویہ ،عراق ، شام ، لبنان اور یمن میں جاری بحران اور لیبیا میں کام نمایاں ہیں۔اس لیے قطری ایشو کو عوام کا مرکزِ توجہ نہیں ہونا چاہیے۔وہ امریکا کے ایک ٹی وی پروگرام میں گفتگوکررہے تھے ۔

لازمی ویزاکی شرط قابل مذمت،بحرین خلیج تعاون کونسل معاہدوں کی خلاف ورزی کررہاہے،قطرکا ردعمل

دوحہ/ماناما ۔2نومبر2017(فکروخبر /ذرائع ) بحرین نے ملک میں داخل ہونے والے قطری شہریوں کے لیے ویزا لازمی قرار دے دیا۔غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق بحرین نے قطر کے شہریوں پر ویزا کی شرط لاگو کردی ہے جو 10 نومبر سے نافذ العمل ہوگی۔ بحرین کے حکام کا کہنا تھاکہ قطری شہریوں کے لیے ویزا لازمی قرار دیئے جانے کا مقصد ملک کی سیکیورٹی کو بہتر بنانا ہے کیوں کہ حالیہ تنازعہ کے بعد شہریوں کی حفاظت کے لیے ایسے اقدامات ضروری ہوگئے تھے۔اس سے قبل خلیج تعاون کونسل میں شامل 6 ممالک کے شہریوں پر آمدورفت کے لیے ویزا ہونا ضروری نہیں تھا۔

بحرین:2؍نومبر2017(فکروخبر/ذرائع) بحرین کے دفتر استغاثہ نے ملک کی کالعدم مرکزی اپوزیشن جماعت کے دو رہنماؤں پر قطر کے لیے جاسوسی کا الزام عائد کر دیا ہے۔ یہ پیشرفت بحرین حکومت کی طرف سے قطر کے ساتھ ہر طرح کے تعلقات منقطع کرنے کے کئی ماہ بعد سامنے آئی ہے۔ بحرین کی سرکاری نیوز ایجنسی BNA کے مطابق الوفاق پارٹی کے سیکرٹری جنرل شیخ علی سلمان اور اس جماعت کے ایک اور رہنما شیخ حسن سلطان پر الزام عائد کیا گیا ہے کہ انہوں نے قطر کے ساتھ سازش کر کے معاندانہ کارروائیاں کیں اور بحرین کے قومی مفادات اور شہرت کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی۔

قطر:30؍اکتوبر2017(فکروخبرذرائع)قطر کے امیر شیخ تمیم بن حماد الثانی نے خبردار کیا ہے کہ خلیجی ریاستوں کے درمیان موجود سفارتی تناؤ کو عسکری تنازعے میں تبدیل نہیں ہونا چاہیے۔ انہوں نے ایک امریکی نشریاتی ادارے سے بات چیت میں کہا کہ انہیں خوف ہے کہ اگر یہ معاملہ مسلح تنازعے میں تبدیل ہوا، تو پورا خطہ عدم استحکام کا شکار ہو جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اس تنازعے کے حل کے لیے فریقین کے ایک مشترکہ اجلاس کی میزبانی کی پیش کش کی ہے۔ واضح رہے کہ رواں برس جون سے سعودی عرب، بحرین، مصر اور متحدہ عرب امارات نے قطر کے ساتھ تمام تر سفارتی اور سفری رابطے منقطع کر رکھے ہیں۔

جدہ:27؍اکتوبر2017(فکروخبر/ذرائع)سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے کہا ہے کہ قطر کے ساتھ بحران انتہائی چھوٹا معاملہ ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے برطانوی خبر رساں ادارے ‘رائیٹرز’ سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ایک سوال کے جواب میں سعودی رہنما کا کہنا تھا کہ قطر کے ساتھ بحران کا ہماری سرمایہ کاری پر چنداں اثر نہیں پڑا۔شہزادہ محمد کا مزید کہنا تھا کہ یمن کی جنگ اس لئے جاری رکھے ہوئے ہیں تاکہ حوثیوں کی شکل میں نئی حزب اللہ کو اپنی سرحدوں سے دور رکھ سکیں۔

حماس سے کوئی اختلاف نہیں، غزہ میں منصوبے جاری رکھیں گے: سفیر محمد العمادی

غزہ ۔26اکتوبر2017(فکروخبر/ذرائع)فلسطینی اتھارٹی کے ہاں تعینات قطر کے سفیر اور غزہ کی پٹی کی تعمیر نو کے لیے قائم کردہ قطری کمیٹی کے چیئرمین محمد العمادی نے اسلامی تحریک مزاحمت ’حماس‘ کے ساتھ اختلافات کی خبروں کو بے بنیاد قرار دیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ حماس اور قطر دونوں ایک صفحے پرہیں۔ حماس کی مصر کے ساتھ قربت کے حوالے سے دوحہ کی ناراضی کی افواہیں بے بنیاد اور جھوٹ کا پلندہ ہیں۔

مزدوروں کی عالمی یونین آئی سی ٹی یو کا قطری فیصلے کا خیرمقدم 

دوحہ ۔26اکتوبر2017(فکروخبر/ذرائع) قطر نے’غیر ملکی مزدوروں‘ سے متعلق قوانین میں اصلاحات کا وعدہ کیا ہے جس میں پہلی بار کم سے کم اجرت کی حد مقرر کرنا بھی شامل ہے۔ابھی تک واضح نہیں ہو سکا کہ مجوزہ اصلاحات کو کب نافذ کیا جائے گا۔قطر کی جانب سے لیبر قوانین میں اصلاحات کا فیصلہ انٹرنیشنل لیبر آرگنائزیشن آئی ایل او کے ایک دن بعد ہونے والے اجلاس سے پہلے آیا ہے۔آئی ایل او نے پہلے ہی قطر کو غیر ملکی مزدوروں کے استحصال کو روکنے کے حوالے سے متنبہ کر رکھا ہے جبکہ قطر پر حقوق انسانی کی تنظیموں کی جانب سے سنہ 2022 کے فٹبال ورلڈ کپ کی میزبانی کے سلسلے میں جاری تیاریوں کے دوران غیر ملکی کارکنوں کے حالاتِ کار اور رہائش کے بارے میں خدشات ظاہر کیے جاتے رہے ہیں۔مزدوروں کی عالمی یونین آئی سی ٹی یو نے قطر کے فیصلے کا خیرمقدم کیا ہے۔آئی سی ٹی یو کے جنرل سیکریٹری شیرن بورو نے کہا ہے کہ تبدیلی نے' حقیقی اصلاحات' اور جدید دور کی غلامی کے دور کو ختم کرنے کا عندیہ دیا ہیاقوام متحدہ کی ایجنسی آئی ایل او نے قطر کو غیر ملکی مزدوروں کی حالتِ زار کو بہتر کرنے کے حوالے سے نومبر تک کی مہلت دے رکھی تھی اور کہا تھا کہ اس کے ساتھ غیر معمولی اقدام کے طور پر باضابطہ تحقیقات شروع کی جا سکتی ہیں۔آئی ایل او کی گورننگ باڈی کا اجلاس چھبیس سے نو نومبر کے درمیان ہو رہا ہے۔قطر میں ایک عرصے تک غیر ملکی مزدوروں کے لیے کفالہ کانظام رہا ہے جس کے تحت قطر میں کام کرنے والے کسی بھی شخص کو اپنی کمپنی کی اجازت کے بغیر نوکری تبدیل کرنے کے اجازت نہیں تھی جبکہ کوئی کمپنی یہ اجازت نہیں دیتی تھی اور کمپنی کی شرائط پر کام چھوڑنے کی صورت میں آپ کو گھر واپس بھیج دیا جاتا تھا اور آپ دو سال تک قطر کام کی غرض سے واپس نہیں آ سکتے تھے۔قطری حکام نے دسمبر 2016 میں کفالہ کے نظام کی جگہ غیر ملکیوں کے داخلے اور اخراج کے حوالے سے نیا قانون لاگو کرنے کا اعلان کیا تھا جس پر ایمنسٹی انٹرنیشنل سمیت دیگر حقوق انسانی کی تنظیموں نے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس تبدیلی کے باوجود یہ نظام ایسے ہی اپنی جگہ برقرار رہے گا۔آئی سی ٹی یو کا کہنا ہے کہ جن اصلاحات پر اتفاق رائے ہوا ہے ان میں نسل سے بلاتر سب مزدوروں کی کم سے کم اجرت کا تعین، کام دینے والا اپنے ملازمین کو قطر چھوڑنے سے نہیں روک سکے گا۔کاروباری اداروں کی بجائے شناختی دستاویزات ریاست جاری کرے گی۔ایک سینٹرل اتھارٹی ورک کنٹریکٹ کی شرائط پر نظر رکھے گی تاکہ ملازمت کی طے کردہ شرائط کو سخت شرائط سے تبدیل نہ کیا جا سکے۔ کام کی جگہ پر ملازمین کی کمیٹی بنائی جائے گی جس کے ساتھ شکایت کرنے کا طریقہ کار بھی موجود ہو گا۔آئی سی ٹی یو کے جنرل سیکریٹری شیرن بوروکا کہنا ہے کہ ابھی اس حوالے سے کافی کچھ کرنے کی ضرورت ہے اور آئی سی ٹی یو اس مسئلے پر بات کرنے کے لیے قطر کے وزیرِ لیبر سے ملاقات کرے گی۔قطر میں ایک اندازے کے مطابق 15 لاکھ غیر ملکی مزدور ہیں جن سے اکثریت کا تعلق ایشیائی ممالک سے ہے اور وہ تعمیراتی شعبے میں کام کرتے ہیں۔آئی سی ٹی یو کی 2013 کی ایک رپورٹ کے سنہ 2022 کے فٹبال عالمی مقابلوں کے لیے تعمیراتی منصوبوں میں کام کرنے والے کم از کم 12 سو مزدور ہلاک ہوئے ہیں۔ان اعداد و شمار کی تصدیق کرنا مشکل ہے تاہم بی بی سی کے 2015 کے ایک تجزیے کے مطابق یہ تعداد زیادہ ہو سکتی ہے اور ہو سکتا ہے کہ اس کے بعد سے تعداد میں اضافہ ہو گیا ہو۔

کئی گرفتار،اہم دستاویزات اورصندوق قبضے میں لے لیے 

دوحہ۔17اکتوبر2017(فکروخبر/ذرائع) قطر کے دارالحکومت دوحہ میں واقع حکمران خاندان کے اہم رہ نما سلطان بن سحیم آل ثانی کے محل پر سیکیورٹی اہلکاروں نے دھاوا بول دیا، گھر میں توڑپھوڑ کی، اہم دوستاویزات اور سامان بھی قبضے میں لے لیا گیا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق حکمراں خاندان سے بعض امور میں سیاسی اختلافات رکھنے والے سلطان بن سحیم آل ثانی قطری حکومت کی انتقامی کارروائیوں کا شکار ہیں۔انہیں خلیجی ممالک کی حمایت میں بات کرنے کی پاداش میں قطری حکومت کی طرف سے انتقامی کارروائیوں کا سامنا ہے۔

ریاض :17؍اکتوبر2017(فکروخبر ؍ذرائع)قطر کے بحران کو حل کرنے کے سلسلے میں کویت کے امیرشی‍خ صباح الاحمد الصباح ایک بار پھر سعودی عرب پہنچ گئے ہیں جہاں وہ قطر کے بحران کو حل کرنے کے سلسلے میں سعودی عرب کے بادشاہ ملک سلمان سے تبادلہ خیال کریں گے۔اطلاعات کے مطابق کویت میں دو ہفتہ کے بعد خلیج فارس تعاون کونسل کا سربراہی اجلاس منعقد ہونے والا ہے اور اس اجلاس سے قبل کویت ،قطر اور سعودی رعب کے درمیان جاری بحران کو حل کرنے کی کوشش کررہا ہے۔

صفحہ 1 کا 6