Live Madinah

makkah1

dushwari

عراقی فورسز کا موصل کے مغرب میں واقع دو علاقوں کو آزاد کرانے کا اعلان

 عراق۔09مارچ(فکروخبر/ذرائع )عراقی فورسز نے جمعرات کے روز شمالی شہر موصل کے مغرب میں واقع دو اور علاقوں کو آزاد کرانے کا اعلان کیا ہے جبکہ شہر کے مکینوں نے بتایا ہے کہ گلیوں اور بازاروں میں بے گورو کفن لاشیں پڑی ہیں اور لاتعداد شہری جنگ کے نتیجے میں تباہ شدہ مکانوں اور عمارتوں کے ملبے تلے دبے ہوئے ہیں۔موصل میں داعش کے خلاف جاری  ہم آرہے ہیں نینویٰ آپریشن کے کمانڈر عبدالامیر رشید یاراللہ نے بتایا ہے کہ انسداد دہشت گردی فورسز نے دو علاقوں المعلمین اور السایلو کو آزاد کرا لیا ہے۔عراق کی خصوصی فورسز کے کمانڈر جنرل معن السعدی نے العربیہ نیوز کو بتایا ہے کہ ان کے دستوں نے موصل کے دائیں جانب فوجی کارروائیاں شروع کردی ہیں اور وہ بڑی تیزی سے نئے علاقوں کی جانب پیش قدمی کررہے ہیں۔

رام الله :۔ 06 مارچ (فکروخبر/ذرائع) اسرائیلی فوج کے کمانڈوز نے مغربی کنارے کے شہر رام اللہ میں فلسطینی عوامی کارکن اور بلاگر باسل الاعرج کی زندگی کا چراغ گل کر دیا۔ اسرائیلی کمانڈوز نے اتوار کو رات گئے اُس رہائشی فلیٹ پر چھاپہ مارا جہاں باسل روپوش تھا اور اسے موت کے گھاٹ اتار دیا۔ قابض اسرائیلی حکام کا دعوی ہے کہ باسل نے گرفتاری دینے کے بجائے مسلح مزاحمت کی جو دو گھنٹے تک جاری رہی۔بعد ازاں عسکری آپریشن کے مقام کے اطراف میں فلسطینی نوجوانوں اور اسرائیلی کمانڈوز کے درمیان جھڑپیں شروع ہو گئیں جس کے دوران تین فلسطینی زخمی ہو گئے۔فلسطینی بلاگر باسل الاعرج کا تعلق بیت لحم شہر کے نزدیک واقع گاؤں الولجہ سے ہے اور وہ فلسطینی میڈیا کے حلقوں میں اچھی طرح سے معروف تھا

گورنر بن کر شہریوں کی خدمت کو اپنا شعار بناؤں گا:محمد السید

مصر:04مارچ(فکروخبر/ذرائع)مصری نژاد ایک مسلمان نوجوان ڈاکٹر اور سماجی کارکن عبدالرحمان محمد السید نے امریکی ریاستی مشی گن کے گورنر کے عہدے کے لیے انتخابات میں حصہ لینے کا اعلان کیا ہے۔ اگر وہ اپنے اس عزم میں کامیاب ہوجاتے ہیں تو وہ امریکا کی کسی ریاست کے پہلے مسلمان گورنر ہوں گے۔ بزنس انسپائڈر ویب پورٹل نے 32 سالہ مصری نژاد محمد السید کا ایک بیان نقل کیا ہے جس میں اس کا کہنا ہے کہ وہ مشی گن ریاست میں گورنر کے عہدے کا امیدوار ہے۔ ان کا کہنا ہے کہمیں نے خود کو گورنر کے عہدے کے لیے نامزد کیا ہے۔ مجھے یقین ہے کہ میں گورنر شپ کے لیے کسی مسلمان یا غیر مسلم گورنر سے زیادہ بہتر ثابت ہوں گا۔

وسیع پیمانے پر تباہی پھیلانے والے نصف ٹن وزنی کلسٹر بموں کا استعمال

شام :۔02 مارچ(فکروخبر/ذرائع)شام میں روسی فوج کی جاری بمباری کو 17 ماہ ہوچکے ہیں۔ ایک رپورٹ کے مطابق جنگ بندی کے باوجود روسی فوج شام میں بمباری کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہے۔ بمباری کے دوران ہزاروں معصوم شہریوں کو قتل کردیا گیا۔ جن میں ایک ہزار سے زاید بچے بھی شامل ہیں۔العربیہ کے مطابق شام میں انسانی حقوق کی صورت حال پر نظر رکھنے والے ادارےسیرین آبزرویٹری کی طرف سےجاری کردہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ روس سے شام میں 30 ستمبر 2015ء کو فضائی حملوں کا آغاز کیا تھا۔ 28 فروری 2017ء تک روسی فوج مسلسل سترہ ماہ سے بمباری جاری رکھے ہوئے ہے۔ روسی فوج کی بمباری کے نتیجے میں 11 ہزار 312 عام شہری مارےجا چکے ہیں۔رپورٹ کے مطابق جب سے روسی فوج نے شام میں بمباریی کا آغاز کیا ہے تب سے 1175 شامی بچے شہید کیے جا چکے ہیں۔ بمباری کے نتیجے میں 686 خواتین،2977 مرد، داعش کے 3209 جنگجو،دیگر اسلام پسند گروپوں کے 3265 جنگجو مارے گئے۔

بچے جنم دینے کا عالمی ریکارڈ قائم

فلسطین :یکم مارچ،(فکروخبر/ذرائع )فلسطین میں ایک چالیس سالہ خاتون کے 69 بچوں کی حیران کن اور ناقابل یقین خبر نے سب کو ورطہ حیرت میں ڈال دیا ہے۔العربیہ کے مطابق فلسطین کے گنجان آباد علاقے غزہ کی پٹی سے تعلق رکھنے والے ایک فلسطینی شہری نے بتایا کہ اس کی بیوی کے مختلف اوقات میں جنم دیے گئے بچوں کی تعداد 69 ہے۔غزہ آن لائن نیوز ایجنسی سے بات کرتے ہوئے شوہر نے اپنی شناخت ظاہر نہیں۔ تاہم اس نے بتایا کہ اس کی بیوی زچگی کی بیماری کے دوران گذشتہ اتوار کو غزہ کے ایک اسپتال میں انتقال کرگئی تھی۔فلسطینی شہری نے بتایا کہ اس کی فوت ہونے والی بیوی نے 16 بار جڑواں، 7 بار تین تین اور 4 بار چار چار بجچے جنم دیے۔بین الاقوامی اعدادو شمار کے مطابق اگر کسی خاتون کے ہاں بچے جنم دینے کا یہ عالمی ریکارڈ ہے۔ تاریخ میں اتنے زیادہ بچے پیدا کرنے کا کوئی واقعہ نہیں ملتا۔

کوالالمپور ۔27 فروری (فکروخبر/ذرائع))سعودی عرب کے شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے کہا ہے کہ ان کا ملک دنیا بھر میں اسلامی نصب العین (کاز) کا پشتی بان ہے۔شاہ سلمان کوالالمپور میں میزبان ملک کے شاہ کی جانب سے اپنے اعزاز میں دیے گئے عشائیے میں تقریر کررہے تھے۔ انھوں نے کہا کہ ہم اس بات کی تصدیق کرتے ہیں کہ مملکت سعودی عرب تمام اسلامی نصب العینوں کی پشتی بان ہے اور ہم آپ کے ملک کے ساتھ مل کر مسلمانوں کو درپیش کسی بھی ایشو میں معاونت کے لیے تعاون کرنے کو تیار ہیں۔خادم الحرمین الشریفین اپنے ایک ماہ کے طویل غیرملکی دورے کے پہلے مرحلے میں اتوار کو کوالالمپور پہنچے تھے۔

الشیخ میزو  کا امام مہدی ہونے کا بھی دعویٰ

مصر: 27 فروری (فکروخبر/ذرائع)مصرمیں جرائم کی تحقیقات کرنے والی ایک عدالت نے منکر حدیث نام نہاد مبلغ اور خود کو امام مہدی منتظر قرار دینے کے دعوے دار محمد عبداللہ عبدالعظیم کو پانچ سال قید با مشقت کی سز کا حکم دیا ہے۔العربیہ کےمطابق محمد عبداللہ عبدالعظیم المعروف الشیخ میزو  کے خلاف شبرا الخیمہ کی عدالت میں توہین مذہب کے الزام میں مقدمہ چل رہا تھا۔مقامی قانون دان ایڈووکیٹ سمیر صبری نے الشیخ میزو کے خلاف عدالت میں دو الگ الگ الزامات کے تحت مقدمہ قائم کیا تھا۔ ان پر الزام تھا کہ وہ خود کو امام مہدی موعود قرار دیتے ہیں۔ اس کے علاوہ احایث صحیحہ کے منکر اور امام بخاری کی مرتب کردہ صحیح بخاری کی صحت سے انکاری ہیں۔خیال رہے کہ الشیخ میزو نامی مذہبی مبلغ نے کچھ عرصہ پیشتر سماجی رابطے کی ویب سائیٹ  فیس بک پر پوسٹ ایک بیان میں دعویٰ کیا تھا کہ میں مہدی منتظر ہوں۔ مجھےعلم غیب کی خبریں دی جاتی ہیں۔

بیت المقدس:۔26فروری(فکروخبر/ذرائع) اسرائیلی میڈیا کے مطابق ہفتے کے روز درجنوں لبنانی شہریوں نے اسرائیل کے ساتھ سرحد پر مظاہرہ کیا۔ اس موقع پر مظاہرین نے اپنے قصبے میں جاسوسی کے واسطے سماعت کے خفیہ آلات کی تنصیب پر احتجاجا اسرائیلی سرحد کو عبور کرنے کی کوشش بھی کی۔ تاہم اسرائیلی فوج نے انہیں دور کر دیا۔اسرائیلی فوج کی ترجمان نے فرانسیسی خبر رساں ایجنسی کو بتایا کہ مظاہرین کو سرحد پار کرنے کی کوشش سے روکنے کی کارروائی میں کوئی زخمی نہیں ہوا۔اسرائیلی میڈیا کے مطابق لبنانی مظاہرین سرحد کے نزدیک اپنے قصبے میں اسرائیلی فوج کی جانب سے جاسوسی کا ساز و سامان نصب کرنے پر سراپا احتجاج بنے ہوئے تھے۔لبنان اور اسرائیل اب بھی حالت جنگ میں ہیں اور لبنان کے جنوب میں سرحد کی نگرانی کے لیے 10 ملکوں پر مشتمل اقوام متحدہ کی عارضی فوج کے 10 ہزار اہل کار تعینات ہیں۔

 عراق۔25فروری(فکروخبر/ذرائع):امریکی انٹیلی جنس ایجنسی CIA کے تحقیق کار جان نکسن کے مطابق اُن کی اولین ذمے داری سابق عراقی صدر صدام حسین کے بارے میں زیادہ سے زیادہ معلومات جمع کرنا تھی۔ بعد ازاں انہیں بغداد بھیج دیا گیا تاکہ وہ صدام کی تلاش میں مدد کر سکیں۔ نکسن کا کہنا ہے کہ انہیں اس بات میں ذرہ برابر بھی شک نہیں کہ امریکی افواج نے جس شخص کو گرفتار کیا تھا وہ صدام حسین ہی تھا۔ نکسن نے 30 یا 40 سوالات کی فہرست تیار کی جس کا جواب صرف صدام ہی دے سکتے تھے۔ جان نکسن نے یہ انکشافات العربیہ نیوز چینل کے پروگرام "نقطۃ نظام" میں دیے گئے ایک خصوصی انٹرویو میں کیے۔ یہ انٹرویو جمعے کی شب پاکستان کے وقت کے مطابق رات 10:30 بجے نشر ہو گا۔

بیت المقدس ۔23فروری(فکروخبر/ذرائع) بیت المقدس میں قابض اسرائیلی حکام کی جانب سے فلسطینیوں کے گھروں کو منہدم کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔ بدھ کی صبح قابض اسرائیلی فوج نے شہر کے ایک علاقے بیت حنینا میں لوئی ابو رموز نامی فلسطینی کا گھر گرا دیا۔ اس طرح رواں سال کے آغاز سے اب تک بیت المقدس میں منہدم کیے جانے والے گھروں کی مجموعی تعداد 42 ہو گئی ہے۔ اعداد و شمار سے معلوم ہوتا ہے کہ نئی امریکی انتظامیہ کے حکومت سنبھالنے کے بعد سے انہدام کی کارروائیوں میں غیر مسبوق تیزی دیکھی جا رہی ہے۔لوئی کے چچا محمد ابو موز نے تقریبا روتے ہوئے "العربیہ " کو بتایا کہ اس کے بھتیجے نے اس گھر کو بنانے کے لیے اپنے پاس موجود سارا سونا فروخت کر دیا تھا۔ وہ اپنے بچوں کے لیے روزی کمانے کے واسطے صبح صادق کے وقت گھر سے نکل جاتا ہے۔ادھر خود لوئی نے بتایا کہ اس کا یہ گھر 15 سال سے قائم تھا اور وہ اب تک اس پر جرمانے کی مد میں 20 ہزار ڈالر سے بھی زیادہ کے چالان کی ادائیگی کر چکا ہے۔