Live Madinah

makkah1

dushwari

منگلور 24؍ نومبر 2016(فکروخبرنیوز) منگلور سے دمام جانے والی ایرانڈیا ایکسپریس کی کوچی میں ہنگامی لینڈنگ کیے جانے کی خبر فکروخبر کو موصول ہوئی ہے۔ ذرائع کے مطابق فلائٹ IXE 885 نے کل شام چھ بج کر تیرہ منٹ پر منگلور سے دمام کے لیے اڑان بھری ، لیکن اچانک کسی ایرکرافٹ نے اے ٹی سی کی اجازت سے ہوائی جہاز کا رخ سیدھے کوچی کی جانب موڑدیا جہاں شام ساڑھے سات بجے جہاز کی ہنگامی لینڈنگ ہوئی۔ بتایا جارہا ہے کہ ایر انڈیا کے انجینئرس نے ہوائی جہاز کا معائنہ کرنے کے بعد کہا کہ جہاز میں کوئی خرابی نہیں ہے جس کے بعد جہاز شام ساڑھے دس بج کوچی سے دمام کے لیے روانہ ہوا۔

سرکاری بس کنڈکٹر پر جان لیوا حملہ 

منگلور۔23؍ نومبر ۔2016۔(فکرو خبر نیوز)سرکاری بس اور نجی بسوں کے مابین مسافروں کو سوار کرنے کے لئے اہم شاہراہوں پر ایک دوسرے سے آگے بڑھنے کا جنون جاری رہتاہے ،ا ور اس بیچ ان دونوں کے مسابقت کے جنون کی وجہ سے اکثر سڑک حادثے پیش آتاہیں۔ اس بار اوورٹیک کا مسئلہ ہاتھاپائی میں تبدیل ہوگیا اور نجی بس کے مسافروں کی جانب سے سرکاری بس کنڈکٹر پر جان لیوا حملہ کئے جانے کی واردات22؍ نومبرکے روز ا پیش آئی ہے ، فکرو خبر کے مطا بق منی پال سے اڈپی جانے والی ایک گورنمنٹ بس جب درمیان راستہ ایلورجاتے ہوئے شام ایک کالج پہنچی تو اسی وقتAKMS نامی ایک نجی بس بائیں جانب سے آتے ہو ئے سرکاری بس کے سامنے اس طرح سے کھڑی ہوگئی کہ گورنمنٹ بس کی طرف رخ کر نے والے مسافر کے لئے راستہ بندہو جائے اور تمام مسافر گورنمنٹ بس کا رخ کر نے کے بجائے اپنی گاڑی پر سوار ہو کر ان کی آمدنی میں اضا فہ کریں ،

یونیفارم سیول کوڈ کی کھل کر مخالف کی گئی 

منگلور 23؍ نومبر 2016(فکروخبرنیوز) مرکزی حکومت کی جانب سے شریعتِ اسلامی میں مداخلت کرتے ہوئے یکساس سیول کوڈ کے نفاذ کی بات سامنے آنے کے بعد ملک بھر کے مسلمانوں نے اتحاد کا مظاہرہ کرتے ہوئے اکثر شہروں میں تحفظِ شریعت کے عنوان پر جلسوں اور جلوسوں کے انعقاد کا سلسلہ برابر جاری ہے۔ کل جنوبی کنیرا اور اڈپی ضلع کے مسلم سینٹرل کمیٹی نے دیگر مسلم تنظیموں کے اشتراک سے عظیم الشان اجلاس تحفظِ شریعت کے عنوان پر منعقد کیا گیا جس میں علماء اور دانشوران نے قوم سے خطاب کرتے ہوئے یکساں سیول کوڈ کی کھل کر مخالفت کی اور کہا کہ شریعت میں حکومت کی جانب سے کوئی بھی مداخلت برداشت نہیں کرے گی۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کرناٹکا سمانتھا تنظیم کے رکن حاجی عبدالعزیز دارمی نے کہا کہ ہم شریعت کی حفاظت کے لیے اپنا خون دینے کے لیے بھی تیار ہیں اور ہمیں اس کے لیے دہلی تک بھی جانا پڑے تو ہمارے لیے یہ کوئی مشکل کام نہیں ہے۔

بدمعا شوں نے اخلاقی قدروں کو پامال کر تے ہوئے کالج کے ایک جوڑے کو بنا یا اپنے ظلم کا نشانہ

منگلور۔21؍ نومبر ۔2016۔ (فکرو خبر نیوز)ضلع منگلورکے کئے کئی علاقوں میں گذشتہ کئی روز سے غنڈوں کا راج چل رہا ہے ، ،اور بعض فرقہ پرست نوجوان خود ساختہ پولیس بن کر لو گوں کو ہراساں کر نے اور ان سے پیسہ وصول کر نے کا دھندہ چلارہے ہیں، ،مسلسل بد معاشی اور فتنہ انگیزیوں کی وجہ سے شہر منگلور ہر دن سر خیوں میں نظر آرہا ہے ،اسی شر پسندی سے تعلق رکھنے والا ایک اور واقعہ آج؍21۔ نومبرکو اس وقت پیش آیا جب الال میں بس پر سوار ایک خا تون اور ایک لڑکے پر اچانک پانچ بد معاشوں نے حملہ کر دیا ،کہا گیا ہے کہ دو کالج اسٹوڈنٹس ایک مرد اور ایک عورت سمیشورکے ساحل پر دیکھے گئے تھے ،پھر جب یہ دونوں بس پر سوار ہو کر کالج سے واپس آرہے تھے تو ان پانچ لو گوں نے (جنھوں نے اس جوڑے کو ساحل پر دیکھا تھا )ان کو بس سے باہر نکال کر ان کو مار نے لگے،

منگلور:20؍نومبر(فکروخبرنیوز)ایک نوجوان دو شیزہ کی گمشدگی کے معاملہ میں ایک گروہ نے شبہ کی بنیاد پر ایک گھر میں گھس تھوڑ پھوڑ مچادی،مکان مالک کی جانب سے معاملہ درج کئے جانے پرپولس نے دو افراد کو حراست میں لے لیا ہے ،تفصیلات کے مطابق سنینا نامی دوشیزہ ہفتہ کے روز دوپہرسٹی کارپوریشن دفتر جانے کا بہانہ کر گھر سے نکلی تھی ،لیکن اس کی نقل وحرکت دیکھ ،بہن نے شبہ کی بنیاد پراس کا پیچھا شروع کیا ،بہن کے مطابق وہ ایک لڑکے کی بائیک پر سوار ہو کر وہاں سے نکل پڑی ،اس معاملہ کی رپورٹ پولس تھانہ میں درج کی گئی ہے اور اسی بیچ شام 7بجے لڑکی کی تلاش کرتے کچھ لوگ کٹھار میں کامت کمپاؤنڈ میں رہائش پذیر لوبو نامی شخص کے گھر زبردستی گھس گئے،

منگلور۔19؍ نومبر۔(فکرو خبر نیوز)بجرنگ دل کے ایک کارکن کو لمبے کے ساکن تلسی داس(30)جن کو چند دنوں قبل دو نوجوانوں پر حملہ کے الزام میں گرفتارکیا گیا تھا ان کے بارے میں لا پتہ ہو نے کی خبر منظر عام پر آئی ہے ،تلسی داس کے خاندان والے بنٹوال کی ایک عدالت میں قیدی پروٹیکشن رٹ دائر کر نے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں ،کہا گیا ہے کہ تلسی داس کے خلاف بہت سارے مقدمات درج کئے گئے ہیں ،جس کی بنا پر وہ کئی دنوں سے پولیس کو مطلوب تھا ،ابھی حال ہی میں مویشیوں کی نقل و حمل کے وقت لو گوں کی ایک بڑی تعداد کو جمع کر کے ان کو ہرا ساں کر نے ،اور موڈپوکالج کے طلباء کو ٹور لے جاتے وقت ان کا راستہ روک کران کو پریشان کر نے کے معاملات میں ملوث ہونے کی بناپر پولیس اس کی تلاش میں تھی ،

منگلور 19؍ نومبر 2016(فکروخبرنیوز) الال اور اس کے مضافاتی علاقوں میں کشیدگی کی واردات میں اضافہ کو دیکھتے ہوئے وزیر اعلیٰ سدارامیا نے کہا کہ پر امن ماحول میں کشیدگی پھیلانے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ یہاں کانگریس پارٹی کے نئے دفتر اور پارٹی کنونشن میں شرکت کے بعد اخباری نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کشیدگی پھیلانے والے افراد بچ نکلنے کا سوچ رہے ہیں لیکن ہم ان کے خلاف سخت کارروائی کریں گے۔ ملک کی موجودہ صورتحال اور پانچ اور سو ایک ہزار کے نوٹ غیر قانونی قرار دئیے جانے پر کہا کہ ہم فیصلہ کا خیر مقدم کیامگر اسے لاگو کرنے کے طریقۂ کار مختلف ہونا چاہیے تھا۔

منگلور 17نومبر 2016(فکروخبرنیوز) پنمبور میں نیو منگلور پورٹ کے پاس اپنی ڈیوٹی انجام دے رہا شخص گیٹ کے اچانک گرنے کے بعد اس کی زد میں آنے سے ہلاک ہونے کی ورادات آج صبح کے اوقات میں پیش آئی ہے۔ مہلوک جوان کی شناخت ایشور نائک (54) کی حیثیت سے کرلی گئی ہے۔ فکروخبر کے مطابق نیو منگلور پورٹ کا یہ گیٹ بہت پرانا ہوچکا تھا اور اس کو بنائے ہوئے کئی سال ہوگئے تھے اور زنگ لگنے سے اس کی حالت خستہ ہوگئی تھی آج اچانک یہ گیٹ گرگئی اور ہاں ڈیوٹی انجام دے رہا جوان اس کی زد میں آنے سے ہلاک ہوگیا۔

سابق وزیر کرناٹک جناردھن پجاری نے مودی کو آڑے ہاتھوں لیا 

منگلور 16؍ نومبر 2016(فکروخبرنیوز) حال ہی میں وزیر اعظم نریندر مودی کے پانچ سو اور ہزار کے نوٹ رد کردئیے جانے کے فیصلہ کے خلاف سابق وزیر کرناٹک جناردھن پجاری نے مودی کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ مودی کا یہ فیصلہ بی جے پی کو ختم کرڈالے گا۔ انہوں نے کہا کہ مودی کے اس اچانک لیے گئے فیصلہ کی وجہ سے عام آدمی کی زندگی مفلوج ہوکر رہ گئی ہے۔ مودی کا یہ فیصلہ بغیر کسی کو بتائے اور متبادل نوٹ کا انتظام کیے بغیر لیا گیا ہے ، موجودہ صورتحال کو دیکھتے ہوئے مودی کی اس میں بات کوئی سچائی نظر نہیں آرہی ہے کہ 30دسمبر تک حالات معمول کے مطابق لوٹ آئیں گے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس فیصلہ کی وجہ سے روزانہ اجرت پر کام کرنے والے مزدور ، تاجر اوریہاں تک کے طلباء کو بھی پریشانی ہورہی ہیں اور اپنے پانچ سو اور ہزار کے نوٹ بدلوانے کے لیے قطار میں کھڑے ہونے پر مجبور ہیں۔

منگلور 16؍ نومبر2016 (فکروخبرنیوز) بلاری اور کیرلا میں برڈ فلو کے اثرات پائے جانے کے بعد جنوبی کنیرا کے ڈپٹی کمشنر ڈاکٹرکے جی جگدیش نے افسران کو ابھی سے اس کی روک تھام کے لیے اقدامات کرنے کی احکامات جاری کردئیے ہیں۔ فکروخبر کے مطابق ڈپٹی کمشنرکی جانب سے جاری کیے گئے ان احکامات کے بعد محکمۂ حیوانیات کے ڈپٹی ڈائریکٹر نے کہا ہے کہ پولیٹری فارم اور گوشت بیچی جانے والی دکانوں میں صفائی کا خاص طور پر خیال رکھا جائے، اس کے خلاف ورزی کی صورت میں ان کے خلاف کارروائی بھی کی جاسکتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پولیٹری فارم سے دکانوں تک مرغیوں کی فراہمی کرنے والی گاڑیوں میں جراثیم مار دوائی استعمال کی جائے اور کیرلا سے کرناٹک میں آنے والی اس طرح کی گاڑیوں کی صفائی پر خاص نظر رکھی جائے اور کرناٹک ، کیرلا کے حدود پر جراثیم مار دوا استعمال کرنے کے بعد ان کو کرناٹک میں داخلہ کی اجازت دی جائے۔