dushwari

اداراتی تحقیقی مضمون (قسط نمبر 3)

عرب اپنی عام زندگی میں عقل وفہم او رتجربہ کے لحاظ سے کسی سے کم نہ تھے ، لیکن تعلیم نہ ہونے کی وجہ سے ان باتوں سے ناواقف تھے جو علم وتعلیم نہ ہونے کے ذریعہ حاصل ہوتی ہیں ، وہ اپنے وسیع اور عموماً بنجر علاقہ میں ہی محصور رہتے ہوئے اپنے تجربہ ومشاہدہ سے حاصل کردہ معلومات سے کام چلاتے ، ان پر کسی تمدن یا نظریہ کی چھاپ نہیں تھی ،

(اداراتی تحقیقی مضمون : قسط نمبر2 )


مکہ کے لوگ شروع میں بت پرست نہ تھے ، ان کے اصلی لوگ حضرت اسماعیل علیہ السلام کی اولاد تھے ، اور اپنے کو حضرت ابراہیم علیہ السلام کے ماننے والے سمجھتے تھے ، اور ان کے دین کو اپنا دین سمجھتے تھے ، ا ن کے ساتھ یمنی قبیلہ جرہم پھر خزاعہ کے لوگ آکر بس گئے تھے ، وہ حضرت اسماعیل علیہ السلام کی اولاد سے مختلف دین رکھتے تھے ،

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES