dushwari

ہندو جاگرن ویدکے کارکن پر حملہ کا معاملہ سراسر جھوٹ :سٹی پولس کمشنر

منگلور:10؍جنوری2018(فکروخبرنیوز) گزشتہ رو ز ہندو جاگرن ویدکے کارکن پر حملہ کئے جانے کے واقعہ کو پولس نے تحقیقات کے بعدجھوٹ پر مبنی قرار دیتے ہوئے جعلی مقدمہ درج کرنے پر شکایت کنندہ کے خلاف سخت کارروائی کئے جانے کی بات کہی ہے ،تفصیلات کے مطابق کل ہند و جاگرن ویدکے کارکن بھرت نے پولس تھانہ پہونچ کر شکایت درج کرائی تھی کہ کچھ نقاب پوشوں نے رات 7:45بجے اس پر درانتی سے حملہ کرنے کی کوشش کی،جبکہ وہ جان چھڑاکر اپنے ایک دوست گھر پناہ لینے میں کامیاب ہوگیا تھا ،

اس معاملہ کے منظر عام پر آنے کے بعد سٹی پولس کمشنر ٹی آر سریش نے خود اس معاملہ کی تفتیش کا خود لے لیا ،کمشنر کا کہنا ہے کہ پولس متاثرہ شخص کے ساتھ جائے واردات پر پہونچ کراس سے پوچھ تاچھ کی جس کے بعد اس کے جھوٹ پر سے پردہ اٹھا ،پولس کے مطابق شکایت درج کراتے ہوئے اس کا کہناتھا کہ اس پر رات قریب 7:45پر حملہ کیا گیا ،اور حملہ آوروں میں سے ایک نے بھورے رنگ کا ٹی شرٹ پہنا ہوا تھا جبکہ وہ جگہ اتنی تاریک ہے کہ کسی بھی رنگ کی پہچان ہوپانا ممکن نہیں ہے ،دوسری بات جو اس نے رپورٹ میں درج کی تھی کہ وہ وہاں سے جان چھڑا کر اپنے دوست کے گھر پناہ لی اور گھر میں کوئی موجو د ہی نہیں تھا لیکن تحقیقات میں یہ بات بھی جھوٹی ثابت ہوئی ہے ،پولس کا کہنا ہے گھر والوں کے بیان کے مطابق وہ اس وقت مکان میں موجود تھے ،اور بھرت ان کے گھر بھی نہیں آیا تھا ،پولس کا کہنا ہے کہ اپنا جھوٹ سامنے آتا دیکھ بھرت آہستہ سے وہاں سے کھسک گیا ، پولس کمشنر نے سورتکل پولس کو ہدایت جاری کی ہے کہ بھرت سے مزید پوچھ تاچھ کرتے ہوئے عدالت میں رپورٹ داخل کی جائے ،اور ساتھ ہی جعلی معاملہ درج کرنے پر اس کے خلاف سخت کارروائی کی جائے ۔ 

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES