dushwari

ذاکر نائیک کی منگلور داخلے پر پابندی عائد کردی گئی ہے:پولس کمشنر

منگلور 27دسمبر (فکروخبرنیوز ) ذاکر نائیک کی منگلور داخلے پر پابندی عائد کردی گئی ہے ، وہ نہ منگلور میں داخل ہوسکتے ہیں اور نہ عوامی جلسے سے خطاب کرسکتے ہیں، یہ پابندی 31دسمبر سے 6جنوری 2016تک یعنی سات دن رہے گی، اس بات کا اعلان سٹی پولس کمشنر مروگن نے پولس کے ایک خصوصی بلاگ میں کیا ہے ۔یہ توقع کی جارہی تھی کہ ذاکر نائیک ساؤتھ کینرا سلفی مومنٹ کے عوامی اجلاس سے خطاب کریں گے جو 3جنوری کو منعقد ہونے جارہا تھا،۔ پولس کی جانب سے بلاگ میں دئے گئے تفصیلات میں درج ہے کہ یہ پابندی سیکشن 144سی آر پی سی کے تحت لگائی گئی ہے۔

میڈیا نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کمشنر مروگن کا کہنا تھا کہ پابندی کا فیصلہ اُس وقت لیا گیا جب اس کے کچھ ویڈیوز کو دیکھا گیا جس میں محسوس کیا گیا ہے کہ اس سے پرامن ماحول میں کشیدگی پیدا ہوسکتی ہے۔ یاد رہے کہ ڈاکٹر ذاکر نائیک کے منگلور آمد کو لے کر یہاں کی ہندو شدت پسند تنظیموں کی جانب سے پزور مخالفت کی گئی تھی اور ضلع انتظامیہ کو یاد داشت بھی پیش کی گئی تھی کہ وہ داخلے کی اجازت نہ دیں، وی ایچ پی نے یہاں تک دھمکی دے ڈالی تھی کہ اگر اجازت دی گئی تو اسی دن ہندو سماج اُتسو کا انعقاد کیا جائے گااور اس میں پروین توگاڑیا کہ بلایا جائے گا۔ 

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES