Live Madinah

makkah1

dushwari

ملاڈچ 1992سے 1995 تک جاری رہنے والی بوسنیا جنگ میں جنگی جرائم کا مرتکب ہوا ،ٹربیونل کا فیصلہ

دی ہیگ ۔23نومبر2017(فکروخبر/ذرائع) اقوام متحدہ کی ایک خصوصی عدالت نے سربرینتسا میں قتل عام کے ملزم راتکو ملاڈچ کو عمر قید کی سزا سنا دی ہے۔ بوسنی سرب فوج کے سابق جنرل ملاڈچ پر آٹھ ہزار کے قریب بوسنیائی مسلمانوں کے قتل سمیت جنگی جرائم کا الزام بھی تھا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ہالینڈ کے شہر دی ہیگ میں اقوام متحدہ کے سابق یوگوسلاویہ کے لیے جنگی جرائم کے ٹریبیونل نے بوسنی سرب جنرل ملاڈچ کو عمر قید کی سزا سنا دی۔

مصالحتی معاہدے کے تحت تمام جماعتوں نے 2018 کے آخر تک عام انتخابات کے انعقاد پر اتفاق کیا

قاہرہ ۔23نومبر2017(فکروخبر/ذرائع) مصر کی زیرنگرانی فلسطینی دھڑوں بالخصوص اسلامی تحریک مزاحمت حماس اور تحریک فتح کے درمیان سات اہم نکات پرمشمل قومی مصالحتی معاہدہ طے پاگیا ہے۔ مصالحتی معاہدے کے تحت تمام جماعتوں نے 2018 کے آخر تک عام انتخابات کے انعقاد پر اتفاق کیا ہے۔

ہالینڈ:23؍نومبر2017(فکروخبر/ذرائع) بوسنیا کے سابق فوجی کمانڈر راٹکو ملاڈچ کو دو عشروں قبل بوسنیا میں ہزاروں مسلمانوں کی نسل کشی اور جنگی جرائم کی پاداش میں عمر قید کی سزا سنائی گئی ہے۔ہالینڈ کے شہر دی ہیگ میں واقع بین الاقوامی عدالتِ انصاف نے بوسنیا کے جنگی جرائم کے ٹربیونل میں 74 سالہ ملاڈچ کو سزا سناتے ہوئے کہا کہ اس نے بوسنیائی علاقے سربرینکا کی قتلِ عام میں اہم کردار ادا کیا تھا۔اس سے قبل عالمی عدالت انصاف نے پہلے یہ فیصلہ سنایا تھا کہ سربرینکا میں 8000 مسلمان مردوں اور نوجوانوں کا قتل جان بوجھ کر کیا گیا جسے نسل کشی کہا جاسکتا ہے۔