Live Madinah

makkah1

dushwari

تازہ ترین خبر:

عراق میں داعش کے خلاف جنگ کے بعد ہر چوتھا بچہ غربت کا شکار

عراق بھر میں نصف اسکولوں کی مرمت کی ضرورت، داعش مخالف جنگ میں تیس لاکھ بچوں کا تعلیمی حرج ہوا،اقوام متحدہ

بغداد۔12فروری2018(فکروخبر/ذرائع ) اقوام متحدہ کے تحت حقوقِ اطفال کے ادارے یونیسف نے کہاہے کہ عراق میں داعش کے خلاف جنگ کے بعد سے ہر چوتھا بچہ غْربت کا شکار ہوچکا ہے،میڈیارپورٹس کے مطابق یونیسف نے ایک بیان میں اقوام متحدہ نے 2014ء کے بعد عراق میں تعلیمی اداروں پر ڈیڑھ سو حملوں اور صحت کے مراکز اور اہلکاروں پر 50 حملوں کی تصدیق کی ۔بیان کے مطابق عراق بھر میں نصف اسکولوں کی مرمت کی ضرورت ہے جبکہ داعش کے خلاف جنگ کے نتیجے میں تیس لاکھ سے زیادہ بچوں کی تعلیم میں خلل پڑا تھا۔عراق نے دسمبر میں داعش کے خلاف جنگ میں فتح کا اعلان کیا تھا اور اس کی سکیورٹی فورسز نے اس جنگجو گروپ کے زیر قبضہ تمام علاقے واپس لے لیے تھے۔

عراقی حکومت داعش سے واگزار کرائے گئے ان علاقوں میں ٹرانسپورٹ ، توانائی اور زراعت کے شعبوں کی بحالی کے لیے کم سے کم 100 ارب ڈالرز کی غیرملکی سرمایہ کاری کی خواہاں ہے۔یونیسف کے مشرقِ وسطیٰ اور شمالی افریقا کے لیے علاقائی ڈائریکٹر گیرٹ کپلائر نے ایک بیان میں کہا کہ بچے عراق کا مستقبل ہیں۔کویت میں عراق کے بارے میں ہونے والی بین الاقوامی کانفرنس عالمی لیڈروں کے لیے یہ ظاہر کرنے کا ایک موقع ہے کہ ہم بچوں پر سرمایہ کاری کے لیے تیار ہیں اور اس کے ذریعے ہم عراق کے استحکام کی غرض سے مدد دینے کو تیار ہیں۔لیکن بعض امریکی اور مغربی عہدہ داروں کے مطابق امریکا اس کانفرنس میں عراق میں سرمایہ کاری یا اس کے لیے کسی امداد کے اعلان کا ارادہ نہیں رکھتا ہے حالانکہ اس نے داعش مخالف بین الاقوامی اتحاد تشکیل دیا تھا اور اس اتحاد کی فضائی مدد نے عراق کی داعش کے خلاف جنگ جیتنے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔