Live Madinah

makkah1

dushwari

شہداء فلسطین کے لواحقین تک رقوم روکنے کے لیے کمیٹی قائم

پاور گول کمیٹی اسرائیلی کنیسٹ کے تحت کام کرے گی 

مقبوضہ بیت المقدس۔ 12؍ نومبر 2017(فکروخبر/ذرائع)   اسرائیلی پارلیمنٹ [کنیسٹ] نے یورپی یونین کی جانب سے فلسطینی اتھارٹی کو جاری کی گئی رقوم فلسطینی مزاحمت کاروں کے ہاتھ لگنے سے روکنے کے لیے ایک نئی کمیٹی تشکیل دی گئی ہے۔ پاور گول کے نام سے تشکیل دی گئی کمیٹی کا بنیادی مقصد یورپی یونین کی طرف سے فلسطینی اتھارٹی کو دی گئی رقوم اسرائیل کے خلاف حملے کرنے والے فلسطینی شہداء اور اسیران کے خاندانوں تک پہنچنے سے روکنا ہے۔

مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق یہ نئی کمیٹی صہیونیت کیمپ کے رکن ایلیٹ نخمیاس فاربین کی تجویز پرقائم کی گئی ہے۔ اس کمیٹی میں لیکوڈ کے رکن امیر اوحانا، فیوچر پارٹی کے حاییم یلینکلنا کے میراف بن اری، جیوش ہوم کے شمولی معلم، شایی کے یعقوب مرگی اور یسرائیل بیتنوکے عودید فورر شامل ہوں گے۔صہیونی رکن کنیسٹ نحمیاس فاربین نے اخبار یسرائیل ھیوم سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ یورپی یونین کی طرف سے فلسطینی اتھارٹی کو دی جانے والی 4.5 ملین یورو کی ماہانہ رقوم کے فلسطینی مزاحمت کاروں کے اہل خانہ تک منتقلی سے متعلق جمع کردہ اعدادو شمار کی روشنی میں کارروائی کریں گے۔
ان کا کہنا تھا کہ اسرائیل کے دائیں اور بائیں بازو کے آباد کاروں کو اس بات پر قائل کرنا مشکل ہے کہ فلسطینی اس وقت تک امن عمل کو آگے بڑھانا چاہیں گے جب تک160 ڈونر ممالک بالخصوص یورپی ملکوں کی طرف سے یہودیوں کے قاتلوں کو دی جانے والی رقوم پر روک نہ لگائے جائے اور وہ رقوم عام فلسطینیوں تک نہ پہنچائی جائیں۔