Live Madinah

makkah1

dushwari

ہیلی کاپٹر حادثے میں ترکی کے 12 فوجی ہلاک(مزید اہم ترین خبریں )

حادثہ بجلی کی تاروں سے ٹکرانے سے پیش آیا

انقرہ ۔یکم جون (فکروخبر/ذرائع)ترکی کے خبر رساں اداروں کے مطابق جنوب مشرقی صوبے شرناق میں ایک فوجی ہیلی کاپٹر کے حادثے کے نتیجے میں کم سے کم 12 فوجی اہلکار ہلاک ہوگئے ہیں۔ترک خبر رساں ایجنسی دوآن کی رپورٹ کے مطابق فوجی ہیلی کاپٹر سیکورسکی  کو شرناق صوبے کے سینوبا علاقے میں حادثہ اس وقت پیش آیا جب ہیلی کاپٹر بجلی کی ہائی وولٹج  تاروں سے ٹکرا گیا۔ہیلی کاپٹر حادثے کے نتیجے میں اس میں سوار بارہ فوجی اہلکار ہلاک ہوگئے ہیں۔ واقعے کے بعد امدادی ٹیمیں جائے وقوعہ کی طرف روانہ کردی گئی ہیں۔ سیکیورٹی ذرائع نے ہیلی کاپٹر میں سوار بارہ فوجیوں کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔

اسرائیلی بحریہ کی فائرنگ سے فلسطینی ماہی گیر زخمی،ہسپتال منتقل 

غزہ۔یکم جون(فکروخبر/ذرائع)اسرائیلی فوج نے فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی کی سمندری حدود میں ماہی گیری کرنے والے فلسطینی شہریوں پر اندھا دھند فائرنگ کی جس کے نتیجے میں ایک ماہی گیر زخمی ہوگیا۔ فلسطینی میڈیا رپورٹس کے مطابق مقامی فلسطینی ذرائعکے مطابق اسرائیلی جنگی کشیتوں سے غزہ کی سمندری حدود میں مچھلیوں کا شکار کرنے والے فلسطینی ماہی گیروں پر سودانیہ کے مقام پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں ایک فلسطینی ماہی گیر زخمی ہوگیا۔ فائرنگ سے متعدد کشتیوں کو بھی نقصان پہنچا ہے۔عینی شاہدینکے مطابق شمالی غزہ میں بیت لاھیا کے شمال مغرب میں واقع ملٹری ٹاور کیمپ میں متمرکز اسرائیلی فوجیوں نے فلسطینی ماہی گیروں پر فائرنگ کی۔ اسرائیلی بحریہ کی کشتیوں کی طرف سے بھی فلسطینی ماہی گیروں کو نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں کم سے کم ایک فلسطینی ماہی گیر زخمی ہوگیا۔عینی شاہدینکے مطابق ماہی گیر کی ٹانگ میں گولی لگی ہے جس کے بعد اسے زخمی حالت میں شمالی غزہ میں انڈونیشیا کے قائم کردہ اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ زخمی ماہی گیر کی شناخت نہیں ہوسکی۔

غزہ نے یاسر عرفات ہوائی اڈے پر قطری کمیٹی کا دفتربنانے کی تردیدکردی 

غزہ۔یکم جون(فکروخبر/ذرائع)فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں حکومت کی جانب سے ان خبروں کی سختی سے تردید کی ہے جن میں دعوی کیا گیا تھا کہ حکومت نے غزہ میں یاسرعرفات ہوائے اڈے کی جگہ پرقطری کمیٹی کا مستقل دفتر قائم کیا ہے۔ فلسطینی میڈیا رپورٹس کے مطابق فلسطینی محکمہ اطلاعات کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ قطری کمیٹی کے دفتر کیلئے جو جگہ مختص کی گئی ہے وہ یاسرعرفات ہوائی اڈے سے متصل ہے جو کہ سرکاری اراضی ہے۔ اس پلاٹ پر ایک مسجد اور قطر کی غزہ کی پٹی میں تعمیر نو کے لیے قائم کردہ کمیٹی کا دفتر بھی بنایا جا رہا ہے۔وزارت اطلاعات نے قطری کمیٹی کے دفتر کیلئے یاسرعرفات ہیلی پیڈ کی جگہ مختص کئے جانے کی جعلی اور من گھڑت خبروں پر افسوس کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ ذرائع ابلاغ نے بغیر تحقیق کے قطری کمیٹی کیدفتر کو متنازع بنانے کی کوشش کی گئی ہے۔خیال رہے کہ حال ہی میں حماس کی قائم کردہ انتظامی کمیٹی نے غزہ کی پٹی میں قطر کی تعمیر نو اور بحالی کے لیے سرگرم کمیٹی کے باضابطہ دفتر کا سنگ بنیاد رکھا گیا تھا۔

ایرانی اسپیکر کی اسماعیل ھنیہ سیاسی شعبے کا سربراہ منتخب ہونے پر مبارک باد

غزہ۔یکم جون(فکروخبر/ذرائع)ایران پارلیمنٹ (مجلس شوری)کے اسپیکر علی لاری جانی نے اسلامی تحریک مزاحمت حماس رہنما اسماعیل ھنیہ کو جماعت کے سیاسی شعبے کا سربراہ منتخب ہونے پر مبارک باد پیش کی ہے۔ فلسطینی میڈیا رپورٹس کے مطابق غزہ کی پٹی میں حماس کے دفتر سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی مجلس شوری کے چیئرمین علی لاری جانی نے جماعت کی قیادت کے نام پرخلوص تہنیتی پیغام بھیجا ہے جس میں انہوں نے اسماعیل ھنیہ کو جماعت کے سیاسی شعبے کا سربراہ منتخب ہونے پر مبارک باد پیش کی ہے۔بیان میں ایران کی فلسطینی قوم کی آزادی کی جدود جہد کی غیرمشروط حمایت کی پالیسی کو سراہتے ہوئے کہا گیا ہے کہ ایران میں اسلامی انقلاب کے بعد فلسطینی قوم کی آزادی کیلئے جاری جدو جہد کو پہلی ترجیح دی گئی ہے۔ ایرانی مجلس شوری بیت المقدس اور مسجد اقصی کی پنجہ یہود سے آزادی اور پورے فلسطین کی آزادی کیلئے جاری جدو جہد کی حمایت کرتی رہی ہے۔خیال رہے کہ چھ مئی کو حماس کی جانب سے نئے قیات کا اعلان کیا گیا تھا۔ حماس کے سابق نائب صدر اسماعیل ھنیہ کو جماعت کے سیاسی شعبے کا سربرہ منتخب کیا گیا۔

امریکی نگرانی میں فلسطیناوراسرائیلی مذاکرات کا ڈھونگ قبول نہیں،حماس 

غزہ۔یکم جون(فکروخبر/ذرائع)اسلامی تحریک مزاحمت حماس نے فلسطینی اتھارٹی اور اسرائیل کے درمیان امریکی نگرانی میں نام نہاد امن بات چیت کی بحالی کی کوششوں کو مسترد کردیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکی سرپرستی میں صہیونی ریاست سے کسی بھی قسم کی بات چیت وقت کاضیاع اور فلسطینی قوم کے حقوق کا تصفیہ تصور کیا جائے گا۔ فلسطینی میڈیا رپورٹس کے مطابق حماس کے مرکزی رہنما اور جماعت کے سیاسی شعبے کے رکن ڈاکٹر صلاح الدین بردویل نے خبردار کیا کہ فلسطینی اتھارٹی امریکا کی نگرانی میں صہیونی ریاست کے ساتھ مذاکرات کے ڈھونگ کی نئی سازشوں میں شامل ہونے سے باز رہے۔اپنے ایک انٹرویو میں صلاح الدین بردویل نے کہا کہ فلسطینی صدر محمود عباس حماس کے خلاف اسرائیل اور امریکا کی زبان میں بات کررہے ہیں۔ حماس کو دھمکیاں دینے اور دیوار سے لگانے کی کوششیں کامیاب نہیں ہوسکتیں۔ انہوں نے خبردار کیا فلسطینی اتھارٹی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے اشارے پراسرائیل کے ساتھ نام نہاد امن مذاکرات کی بحالی سے باز رہے کیونکہ ان مذاکرات کا فلسطینی قوم کو کوئی فائدہ نہیں۔ڈاکٹر بردویل کا کہنا تھا کہ محمود عباس بھی ناقابل اعتبار شخص ہیں۔ کوئی نہیں جانتا کہ وہ فلسطینی تحریک مزاحمت کو کچلنے کیلئے اقدامات شروع کریں گے اور مزاحمت کاروں سے اسلحہ چھین لیں گے۔ادھر غرب اردن میں تحریک فتح کی انقلابی کونسل کے اجلاس کے دوران صدر محمود عباس نے کہا کہ اگر حماس نے غزہ کی پٹی کے انتظامی معاملات کے لے قائم کردہ کمیٹی تحلیل نہ کی تو وہ حماس کے خلاف غیر مسبوق اقدامات کریں گے۔

اسرائیلی حکام نے فلسطینی رکن پارلیمان کو 17ماہ بعد اسرائیلی جیل سے رہاکردیا 

مقبوضہ بیت المقدس۔یکم جون(فکروخبر/ذرائع)اسرائیلی حکام نے انتظامی حراست کی پالیسی کے تحت قید کئے گئے فلسطینی رکن پارلیمنٹ الشیخ محمد ابو طیر کو 17 ماہ کے بعد رہا کردیا۔ فلسطینی میڈیا رپورٹس کے مطابق فلسطینی اسیران اسٹڈی سینٹر کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ بیت المقدس سے تعلق رکھنے والے فلسطینی رکن پارلیمنٹ محمد ابو طیر کی رہائی گزشتہ روز عمل میں لائی گئی۔ ابو طیر کی رہائی کے بعد بھی 11فلسطینی ارکان پارلیمان بدستور پابند سلاسل ہیں۔اسیران اسٹڈی سینٹر کے ریسرچر ریاض الاشقر نے بتایا کہ بیت المقدس سے تعلق رکھنے والے فلسطینی رکن پارلیمنٹ محمد ابو طیر کو جزیرہ نما النقب کی جیل سے رہا کیا گیا۔ انہیں 28 جنوری 2016 کو کفر عقب کے مقام پرواقع ان کی رہائش گاہ سے حراست میں لیا گیا تھا۔ انہیں مسلسل 17 ماہ تک بغیر مقدمہ چلائے جیل میں رکھا گیا۔ حال ہی میں عوفر فوجی عدالت نے ان کی رہائی کا حکم دیا تھا۔ریاض الاشقر نے بتایا کہ 65 سالہ فلسطینی رکن پارلیمنٹ محمد ابو طیر اپنی زندگی کے 32 سال صہیونی زندانوں میں قید کاٹ چکے ہیں۔ موجودہ سترہ ماہ قید کے بعد رہائی سے قبل انہیں 25 ماہ انتظامی قید کے بعد مسلسل زیرحراست رکھا گیا تھا۔ریاض الاشقر کے مطابق اس وقت کی اسرائیلی جیلوں میں 11 فلسطینی ارکان پارلیمنٹ پابند سلاسل ہیں۔ ان میں 9 انتظامی حراست کی پالیسی کے تحت پابند سلاسل ہیں جب کہ دو اسیران مروان البرغوثی کو پانچ بار عمر قید اور احمد سعدات کو 30 سال قید کی سزا کا سامنا ہے۔

انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزیوں میں انتخابات قبول نہیں،حماس

غزہ۔یکم جون(فکروخبر/ذرائع)اسلامی تحریک مزاحمت حماس نے باور کرایا ہے کہ فلسطینی اتھارٹی کی جانب سے وضع کردہ انتخابی ضابطہ کار اور قانون کو کھیل تماشا بنائے رکھے جانے تک جماعت غزہ کی پٹی میں بلدیاتی انتخابات کی کوئی تجویز قبول نہیں کرے گی۔ فلسطینی میڈیا رپورٹس کے مطابق حماس کے ترجمان حازم قاسم نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ فلسطینی اتھارٹی اور رام اللہ حکومت کو پہلے ماوارئے قانون قائم کردہ عدالتوں کو ختم کرنا ہوگا۔ جب تک نام نہاد انتخابی قوانین کو ختم نہیں کیا جاتا حماس غزہ میں انتخابات قبول نہیں کرے گی۔ حماس کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا کہ فلسطینی مرکزی الیکشن کمیشن قانون کے احترام کے اپنے سابقہ عہد وپیمان پر پورا نہیں اتر سکا ہے۔ غزہ اور غرب اردن میں فلسطینی خصوصی سیکیورٹی اختیارات اور مقامی عدالتوں کے حوالے سے فلسطینی الیکشن کمیشن کا کردار سوالیہ نشان بن گیا ہے۔خیال رہے کہ فلسطینی الیکشن کمیشن نے ایک بیان میں کہا ہے کہ کمیشن غزہ میں بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کیلئے حماس کے ساتھ بات چیت پر تیار ہے۔انہوں نے کہا کہ غزہ کی پٹی کے بغیر صرف غرب اردن میں بلدیاتی انتخابات نامکمل ہیں۔

اسپتالوں میں لائے گئے تمام فلسطینی اسیران دوبارہ زندانوں میں منتقل

رام اللہ۔یکم جون(فکروخبر/ذرائع)فلسطینی محکمہ امور اسیران کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ بھوک ہڑتال کے باعث اسپتالوں اور دوسری جیلوں میں منتقل کئے گئے فلسطینی قیدی واپس پرانے قید خانوں میں ڈال دیئے گئے ہیں۔ فلسطینی میڈیا رپورٹس کے مطابق فلسطینی محکمہ اسیران نے کہا ہے کہ عسقلان جیل میں قید تمام فلسطینی بھوک ہڑتالیوں کی صحت اب بھی خراب ہے۔ انہوں نے مسلسل 41دن بھوک ہڑتال کی تھی جس کے بعد انہیں صحت خراب ہونے پر دوسرے جیلوں میں قائم کردہ فیلڈ اسپتالوں میں لایا گیا تھا۔بیان میں کہا گیا ہے کہ بھوک ہڑتال کے دنوں میں اسیران صرف سائل چیزیں اور ویٹامنز کا استعمال کرتے رہے ہیں تاکہ بھوک ہڑتال کے باعث نڈھال ہونے سے بچا جا سکے۔خیال رہے کہ اسرائیلی جیلوں میں 17 اپریل سے مسلسل بھوک ہڑتال کرنیوالے اسیران نے گذشتہ ہفتے کے روز 27 مئی کو بھوک ہڑتال ختم کردی تھی۔ اسرائیلی انتظامیہ کی طرف سے بھوک ہڑتالی اسیران کے مطالبات تسلیم کرنے کی یقین دہانی کرائی گئی ہے تاہم فی الحال ان مطالبات پر کوئی عمل درآمد نہیں ہوا ہے۔

اسرائیلی پولیس کی سیکیورٹی میں 161یہودی قبلہ اول میں داخل،بے حرمتی کا ارتکاب کیا

مقبوضہ بیت المقدس۔یکم جون(فکروخبر/ذرائع)فلسطین میں ماہ صیام کے باوجود یہودی اشرار کی جانب سے قبلہ اول کی مسلسل بے حرمتی کا سلسلہ جاری ہے۔ گذشتہ روز اسرائیلی پولیس کی فول پروف سیکیورٹی میں 161یہودی آباد کاروں نے قبلہ اول میں گھس کر نام نہاد مذہبی رسومات کی ادائیگی کی آڑ میں مقدس مقام کی بے حرمتی کی۔خبر رساں ادارے کے مطابق گزشتہ روز پولیس کی فول پروف سیکیورٹی میں سو سے زائد یہودی آباد کار باب المغاربہ(مراکشی دروازے)سے داخل ہوئے اور کئی گھنٹے مسجد میں گھومنے پھرنے کے بعد باب السلسلہ سے باہر نکلے۔ اس موقع پر اسرائیلی پولیس کی طرف سے یہودیوں کو فول پروف سیکیورٹی مہیا کی گئی تھی۔ شام کے وقت پھر دسیوں یہودی آباد کار قبلہ اول میں داخل ہوئے۔ ان میں یہودی طلبا اور ان کے مذہبی رہ نما بھی شامل تھے۔یہودی آباد کاروں کی طرف سے مسجد اقصی پر یہ دھاوے ایک ایسے وقت میں بولے جا رہے ہیں جب دوسری طرف فلسطینی نمازی اور روزہ دار بھی عبادت کیلئے قبلہ اول آ رہے ہیں۔ اسرائیلی پولیس کی طرف سے فلسطینی روزہ داروں کو روکنے کیلئے طرح طرح کے حربے استعمال کئے جا رہے ہیں جبکہ یہودی شرپسندوں کو کھلی چھٹی دی گئی ہے۔ادھرگزشتہ روز اسرائیلی فوج نے قبلہ اول کے محافظوں کو وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا۔ قابض فوج نے مسجد اقصی کے پہرے داروں کو اس وقت وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا جب وہ مسجد اقصی میں نماز کے لیے آنے والے فلسطینی روزہ داروں کو یہودی آباد کاروں کے ممکنہ حملوں سے بچانے کی کوشش کررہے تھے۔

امریکا نے جدید ترین دفاعی نظام کا کامیاب تجربہ کرلیا

واشنگٹن۔یکم جون(فکروخبر/ذرائع)شمالی کوریا کے پے درپے بیلسٹک میزائل تجربات کے بعد امریکا نے جدید ترین دفاعی نظام کا کامیاب تجربہ کرلیا ۔امریکی فوج کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ شمالی کوریا کی جانب سے وارننگ کے باوجود مسلسل میزائل تجربات کے بعد جدید دفاعی نظام کا کامیاب تجربہ کرلیا گیا ہے۔کیلی فورنیا میں وینڈن برگ فضائی اڈے سے انٹرسیپٹر لانچ کیا گیا جس نے مارشل آئی لینڈ میں ریگن ٹیسٹ سائٹ سے داغے گئے بین البراعظمی بیلسٹک میزائل کے حملے کوناکام بنادیا اور اسے فضا میں ہی تباہ کردیا۔پینٹاگون کے مطابق جدید ترین دفاعی نظام میں انٹرسیپٹرانتہائی اہمیت کے حامل ہیں۔ اس کے ذریعے بین البراعظمی بیلسٹک میزائل حملے کا دفاع کیا جاسکتا ہے۔امریکی میزائل ڈیفنس ایجنسی کے ڈائریکٹر وائس ایڈمرل جم سیرنگ نے کہا ہے کہ جدید ترین دفاعی نظام امریکی کی سلامتی اوردفاع کیلئے بڑی اہمیت رکھتا ہے۔اس تجرنے کے بعد امریکا کو حقیقی خطرے سے نمٹنے کی صلاحیت حاصل ہوگئی ہے۔

پستول کی آواز سے بیلجیئم کے وزیر اعظم بہرے ہو گئے

بیلجیئم۔یکم جون(فکروخبر/ذرائع)لجیئم کے وزیر اعظم چارلس مچل اس وقت جزوی بہرے ہو گئے جب ان کے کان کے قریب ایک دوڑ کے آغاز کے لیے پستول چلائی گئی۔یہ واقعہ برسلز میں پیش آیا جب ملک کی شہزادی نے وزیر اعظم کے کان کے بہت قریب پستول چلا دی۔تصویر میں شہزادی ایسٹرڈ کی جانب سے پستول چلائے جانے پر وزیر اعظم کا ردعمل دیکھا جا سکتا ہے۔حکام کے مطابقگزشتہ روز وزیر اعظم کے ٹیسٹ ہوئے ہیں اور انھوں نے پارلیمنٹ کے سیشن میں بھی شرکت نہیں کی۔وزیر اعظم کے ترجمان کے مطابق وزیر اعظم ٹینائٹس کا بھی شکار ہیں۔ ٹینائٹس میں کانوں میں گھنٹیوں کی آوازیں آتی ہیں۔54سالہ شہزادی ایسٹرڈ بیلجیئم کے بادشاہ کی چھوٹی بہن ہیں۔برسلز میں اتوار کو ہونے والی 20 کلومیٹر ریس ایک سالانہ ریس ہے۔اس ریس میں 40 ہزار حصہ لینے والے افراد کے ہمراہ شہزادی نے بھی حصہ لیا۔

کابل دھماکہ،پاکستان کے دفاعی اتاشی کے گھر کو نقصان پہنچا،اہلکار معمولی زخمی 

کابل۔یکم جون(فکروخبر/ذرائع)غیر ملکی سفارتخانے کے قریب دھماکے میں پاکستان کے دفاعی اتاشی کے گھر کو نقصان پہنچا ہے اور پاکستانی اہلکاروں کو معمولی زخم آئے ہیں۔تفصیلات کے مطابق افغانستان کے دارالحکوت کابل کے ڈپلومیٹک انکلیو کے قریب خودکش کار دھماکے کے نتیجے میں 50 افراد جاں بحق جبکہ متعدد کے زخمی ہوگئے ہیں ۔دھماکے میں ڈپلومیٹک انکلیو میں واقع پاکستان کے اتاشی کے گھر کو بھی نقصان پہنچنے کی اطلاعات ہیں جبکہ ان کے بارے ابھی کوئی اطلاع موصول نہیں ہوئی ہے کہ آیا وہ گھر میں موجود تھے یا نہیں۔دھماکے میں مزید ہلاکتوں کا خدشہ بتایا جارہا ہے۔

یورپی یونین کا دور دراز علاقوں میں انٹرنیٹ پہنچانے کا فیصلہ 

یورپ۔یکم جون(فکروخبر/ذرائع)یورپی یونین نے دور دراز علاقوں میں انٹرنیٹ پہنچانے کے ایک بڑے منصوبے کا اعلان کیا ہے۔یورپی کونسل کے ایک بیان کے مطابق اس منصوبے کے تحت یورپ کے دشوار گزار علاقوں میں قائم اسپتالوں، دیہات اور تفریحی مقامات کو انٹرنیٹ کی سہولت پہنچائی جائے گی۔ اس منصوبے کیلئے یورپی یونین 120 ملین یورو مہیا کرے گی۔ یورپی کونسل نے مزید بتایا کہ اس سلسلے میں رقم جغرافیائی توازن کو مد نظر رکھتے ہوئے تقسیم کی جائے گی۔ یہ منصوبہ یورپی یونین کو ایک وسیع اور مشترکہ ڈیجیٹل مارکیٹ میں تبدیل کرنے کی اسکیم کا حصہ ہے۔