Live Madinah

makkah1

dushwari

سویڈن کا 80 ہزار پناہ گزینوں کو بے دخل کرنے کا فیصلہ(مزید اہم ترین خبریں )

پناہ کے حصول کی درخواستیں مسترد

اسٹاک ہوم ۔ 28جنوری(فکروخبر/ذرائعسویڈن کی حکومت نے اپنے ہاں پناہ لینے والے 80 ہزار افراد کو ملک سے نکالنے کا فیصلہ کیا ہے۔ سویڈش وزیرداخلہ انڈریس ایجمن کا کہنا ہے کہ ان کی حکومت نے 2015ء کے دوران جنگ زدہ ملکوں سے نقل مکانی کر کے سویڈن پہنچنے والے 80 ہزار افراد کی پناہ کی درخواستیں مسترد کر دی ہیں۔ اس کے باوجود یہ لوگ سویڈن میں مقیم ہیں۔ ان کے خلاف جلد ہی حکومت سخت کارروائی کا ارادہ رکھتی ہے۔العربیہ کے مطابق ایک مقامی اخبار اور ایف وی ٹی  ٹی وی سے بات کرتے ہوئے مسٹر ایجمن کا کہنا تھا کہ ہم سویڈن میں آنے والے تارکین وطن کا اندازہ ساٹھ ہزار لگا رہے تھے لیکن اب یہ تعداد بڑھ کر 80 ہزار تک جا پہنچی ہے۔

حکومت نے پولیس اور ایمی گریشن حکام کو ہدایت کی ہے کہ وہ پچھلے سال پہنچنے والے تمام پناہ گزینوں کے کوائف جمع کریں تاکہ انہیں ملک سے نکالنے کا پروگرام بنایا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ پناہ گزینوں کی واپسی میں کئی سال کا عرصہ بھی لگ سکتا ہے۔


 

غرب اردن میں فلسطینی کی کار کی ٹکر سے دو اسرائیلی فوجی شدید زخمی ہوگئے

رام اللہ۔28جنوری(فکروخبر/ذرائع) غرب اردن کے وسطی شہر رام اللہ میں بیت حورون کے مقام پر فلسطینی نوجوان کی کار کی ٹکر سے دو اسرائیلی فوجی شدید زخمی ہوگئے ہیں۔ اسرائیلی عبرانی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق گزشتہ روز شام بیت حورون کے مقام پر ایک فلسطینی شہری نے سڑک کے کنارے کھڑے یہودی فوجیوں پر اپنی کار چڑھا دی جس کے نتیجے میں کم سے کم دو اہلکار شدید زخمی ہوگئے۔ ٹی وی رپورٹ کے مطابق فلسطینی کار ڈروائیور واقعے کے بعد وہاں سے بحفاظت فرار ہوگیا تاہم اسرائیلی فوج نے تلاشی کے دوران ایک فلسطینی شہری کو حراست میں لیا ہے جس کے بارے میں یہ دعویٰ کیا گیا ہے اس نے دو یہودی فوجیوں کو اپنی گاڑی تلے کچل ڈالا تھا۔ اسرائیلی میڈیا کے مطابق یہ ایک حادثہ تھا۔ اسے فلسطینی شہری کی جانب سے دانستہ کارروائی قرار نہیں دیا جاسکتا۔


 

غرب اردن میں یہودی آباد کاروں کیلئے مزید 153 مکانات کی تعمیر کی منظوری دیدی گئی

مقبوضہ بیت المقدس ۔28جنوری(فکروخبر/ذرائع) اسرائیلی وزارت دفاع نے فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے شہروں میں قائم یہودی کالونیوں میں مزید 153 مکانات کی تعمیر کی منظوری دیدی ہے۔ اسرائیل میں انسانی حقوق کیلئے کام کرنیوالے ادارے ’السلام الان‘ کی جانب سے جاری رپورٹ میں بتایا ہے کہ غرب اردن میں اسرائیلی وزارت دفاع نے ڈیڑھ سال کے بعد یہودی آباد کاروں کیلئے نئی تعمیرات کی منظوری دی ہے۔ فرانسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق وزارت دفاع کی جانب سے جن 150 مکانوں کی تعمیر کی منطوری دی گئی ہے ان کیلئے شمالی سلفیت میں ’ارئیل‘ یہودی کالونی اور بیت المقدس کے قریب غوش عتصیون کالونی کی جگہ کا تعین کیا گیا ہے۔ انسانی حقوق کی تنظیم کی ترجمان نے کہا کہ غرب اردن میں اسرائیلی حکومت کی جانب سے پچھلے 18 ماہ سے مزید مکانات کی تعمیر کا سلسلہ بند کردیا تھا مگر تازہ فیصلے سے ظاہر ہوتا ہے کہ صہیونی ریاست غرب اردن میں غیرقانونی تعمیرات کا عمل جارنے رکھنے پر مصر ہے۔ انسانی حقوق کی ترجمان نے کہا کہ بظاہر ایسے لگ رہا ہے کہ اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاھو سخت گیر یہودی رہنماؤں اور یہودی آباد کاروں کے دباؤ میں آگئے ہیں۔ انہوں نے یہودی آباد کاروں کے دباؤ میں آکر توسیع پسندی کا عمل دوبارہ شروع کردیا ہے مگر وہ امریکہ اور دوسرے ممالک کی طرف سے اس پر آنیوالے ممکنہ رد عمل سے خائف نہیں ہیں۔ 


 

اسرائیلی سپریم کورٹ نے شیخ راید صلاح کی سزاء پر نظرثانی کی اپیل سماعت کیلئے منظور کرلی

مقبوضہ بیت المقدس ۔28جنوری(فکروخبر/ذرائع) اسرائیلی سپریم کورٹ نے بزرگ فلسطینی رہنماء الشیخ راید صلاح کی ایک دوسری عدالت کی جانب سے سنائی گئی قید کی سزا کیخلاف نظرثانی کی درخواست سماعت کیلئے منظور کرلی ہے۔ پچھلے سال اکتوبر میں صہیونی ریاست کی مرکزی عدالت نے الشیخ راید صلاح کو 2007 ء میں وادی الجوز میں جمعہ کی تقریر کی پاداش میں 11 ماہ قید کی سزا سنائی تھی جس پر الشیخ راید صلاح کے وکلاء نے مرکزی عدالت کے فیصلے کو اسرائیلی سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا تھا۔ سپریم کورٹ کی جانب سے فیصلہ آنے تک مرکزی عدالت کا فیصلہ معطل رہیگا اور الشیخ راید صلاح کو گرفتار نہیں کیا جائیگا۔ اسرائیلی سپریم کورٹ کی جانب سے گزشتہ روز ہوئی سماعت کے بعد کہا گیا کہ عدالت اپنا فیصلہ ڈاک کے ذریعے انہیں بھجوا دے گی۔ اس موقع پر الشیخ راید صلاح کے وکیل خالد زبارقہ نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ اسرائیلی سپریم کورٹ کی جانب سے کوئی نیا حکم صادر نہیں کیا گیا ہے فی الحال مرکزی عدالت کا فیصلہ اپنی جگہ موجود ہے۔ سپریم کورٹ اسی فیصلے پر اپنا فیصلہ سنائیگی۔


 

اسرائیلی فوج کا بھوک ہڑتالی صحافی کو عدالت میں پیش کرنے سے انکار

مقبوضہ بیت المقدس ۔28جنوری(فکروخبر/ذرائع) اسرائیلی فوج نے 64 دن سے بھوک ہڑتال کرنیوالے فلسطینی صحافی محمد القیق کو عدالت پیش نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے، دوسری جانب اسرائیلی سپریم کورٹ نے بھی فوج کو ملزم کو پیش نہ کرنے کا استثنیٰ دیدیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق اسرائیلی سپریم کورٹ میں فلسطینی بھوک ہڑتالی صحافی محمد القیق کی بھوک ہڑتال سے متعلق دائر درخواست کی سماعت ہونا ہے اس موقع پر عدالت نے ملزم کو پیش کرنے کا بھی حکم دیا تھا تاہم اسرائیلی جیل انتظامیہ نے عدالت کو جواب دیا ہے کہ ملزم بھوک ہڑتال کی وجہ سے عدالت میں پیش نہیں ہوسکتا۔ اس پرعدالت نیجیل انتظانیہ کو اسے عدالت میں پیش نہ کرنے کا استثنیٰ دے دیا ہے۔ فلسطینی بھوک ہڑتالی صحافی کے وکیل جواد بولس کا کہنا ہے کہ اس کے موکل کو عدالت میں پیش کیا جانا اس کا حق ہے مگر صہیونی فوج اور عدلیہ ملی بھگت کے تحت فلسطینی صحافی کو انتقامی پالیسی کا نشانہ بنا رہی ہیں۔


توہین اسلام کے الزام میں مصری خاتون صحافی کوتین سال قید

قاہرہ ۔28جنوری (فکروخبر/ذرائع)مصر کی ایک مقامی عدالت نے اسلامی کی مبینہ توہین کے الزام میں ایک سرکردہ خاتون صحافی اور مصنفہ فاطمہ ناعوت کو تین سال قید اور 20 ہزار مصری پاؤنڈ جرمانے کی سزا سناتے ہوئے اس کا کیس خصوصی عدالت کو بھجوا دیا گیا ہے۔عدالت نے ناعوت کے وکیل محمد عفیفی کی موجودگی میں گذشتہ روز ملزمہ کے خلاف مقدمہ کا فیصلہ سنایا۔ ناعوت پر اسلام کی توہین اور سوشل میڈیا پر عدالت کی توہین کا بھی الزام عاید کیا گیا ہے۔قبل ازیں مصر کے السیدہ زینب پراسیکیوشن کی جانب سے ناعوت کا کیس الجنح کی ایک مقامی عدالت کو بھجوایا گیا تھا۔ اس پر مبینہ طور پر اسلام کی توہین اور’فیس بک‘‘ پر شعائر اسلام کا تمسخر اڑانے کا الزام عائد کیا گیا تھا۔دوسری جانب ناعوت نے اپنے خلاف جاری مقدمہ کے تحت عاید الزامات کی صحت سے انکار کیا ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ اسلام میں عید بقرہ کے موقع پر جانوروں کی قربانی کے تصور پر میرے خیالات کو مبالغہ آرائی دے کر اسے توہین اسلام قرار دیا گیا ہے۔ میں نے جانوروں کی قربانی کو ’’جانوروں کو اذیت‘‘ دینے کے مترادف قرار دیا تھا۔خیال رہے کہ فاطمہ ناعوت نیوز مصر سے پارلیمنٹ کی رکن کی بھی امیدوارہ تھیں تاہم وہ انتخابات کے دوسرے مرحلے میں ہار گئی تھیں۔


اسرائیلی وزیراعظم بانکی مون کی جانب سے فلسطینیوں پر حمایت پر سیخ پا

یروشلم۔28جنوری (فکروخبر/ذرائع) اسرائیلی وزیراعظم بینجمن نیتن یاہو نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بان کی مون کی جانب سے فلسطینیوں کی حمایت پر سیخ پاہوگئے۔یاہو نے بانکی مون پر دہشت کی حوصلہ افزائی کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں کی حوصلہ افزائی کا کوئی جواز نہیں ہے۔اسرائیلی وزیراعظم نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کی جانب سے فلسطینیوں کی احتجاج اور مظاہروں کو انسانی فطرت قرار دینے کے بیان کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے کہا کہ بان کی مون دہشت گردوں کی حوصلہ افزائی کر رہے ہیں۔بینجمن نیتن یاہو نے فلسطین پر بھی ریاست کے قیام کے خلاف کام کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ فلسطینی ’قاتل‘ ریاست قائم نہیں کرنا چاہتے بلکہ وہ ایک ریاست کو تباہ کرنا چاہتے ہیں۔ انھوں نے بین الاقوامی فورم کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ بہت عرصے پہلے ہی اپنی غیر جانبداری اور اخلاقی قوت کھو چکا ہے۔واضح رہے کہ بان کی مون نے سلامتی کونسل میں اپنے ایک بیان میں فلسطین کا حوالہ دیتے ہوئے کہا تھا کہ اپنے گھروں پر قبضے کے خلاف درعمل ظاہر کرنا مظلوم طبقے کی فطرت ہوتی ہے جس کے نتیجے میں اکثر نفرت اور انتہا پسندی کی افزائش ہوتی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ حملوں کی حالیہ لہر فلسطینی نوجوانوں میں تنہائی اور مایوسی کے گہرے احساس کا نتیجہ ہے، 50 برس سے قبضے کے خلاف اور امن کے لئے کوشاں فلسطینیوں کی مایوسی میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔بان کی مون نے فلسطینیوں کی جانب سے اسرائیلیوں پر چاقوؤں سے حملوں کے حالیہ واقعات کی بھی مذمت کی لیکن ساتھ ہی کہا کہ اسرائیل کی جانب سے مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں غیر قانونی تعمیرات فریقین کے درمیان کئے گئے وعدوں پر شکوک و شبہات کو جنم دے رہی ہیں۔


یمن ٗ ایران نواز حوثی باغیوں اور حلیف منحرف سابق صدر کی ملیشیا کی سعودی عرب میں داخل ہونے کی کوشش 

جازان۔28جنوری (فکروخبر/ذرائع)ڑیوں کے ہمراہ سعودی عرب میں داخل ہونے کی کوشش کی تاہم سعودی بارڈر فورسز اور عرب ممالک پر مشتمل اتحادی فوج نے مشترکہ جوابی کارروائی میں دشمن کی دراندازی کی کوشش ناکام بناتے ہوئے دشمن کو پسپا کر دیا ۔عرب ٹی وی کے مطابق حوثی باغیوں اور علی صالح ملیشیا کے جنگجوؤں نے سعودی عرب کے اندر راکٹ داغے اور ساتھ ہی انہوں نے سرحد عبور کر کے مملکت کے اندر داخل ہونے کی کوشش کی مگر بارڈر فورس اور اتحادی طیاروں کی جوابی کارروائی میں دشمن کو فرار ہونا پڑا ۔سعودی عرب کے ’’اپاچی‘‘ جنگی ہیلی کاپٹروں کے ذریعے مملکت کے ساحلی شہر جازان سے متصل حوثیوں کے فوجی اڈوں پر بمباری کی جس کے نتیجے میں ان کے کئی ٹھکانے تباہ ہو گئے ہیں۔ بمباری سے باغیوں کے راکٹ داغے جانے کے متعدد اڈے اور لانچنگ پیڈ بھی تباہ کر دئیے گئے ۔ذرائع کے مطابق سرحد پار سے حوثی باغیوں کی سعودی عرب میں مداخلت کی چوبیس گھنٹے مکمل مانیٹرنگ کی جا رہی ہے۔ مانیٹرنگ میں عرب اتحادی فوج کے جاسوس طیارے بھی بھرپور حصہ لے رہے ہیں۔سعودی فوج نے یمن کی سرحد کے اندر حوثیوں کی جانب سے نصب کردہ ہزاروں بارودی سرنگوں کو بھی ناکارہ بنا دیا ہے۔


سعودی عرب میں سردی کی نئی لہر کے باعث ٹھنڈ میں اضافہ

ریاض۔28جنوری (فکروخبر/ذرائع)کیں اور پہاڑیاں برف کی سفید چادر سے ڈھک گئیں میڈیا رپورٹ کے مطابق ملک کے مختلف شہروں ریاض،دمام ،مدینہ منورہ ،جدہ ، مکہ مکرمہ ،حا یل ،با حا ،بریدہ کے علاقوں میں سرد ہوا ئیں چلنے لگیں اور درجہ حرارت میں کمی آگئی ٗ شہریوں نے گرم کپڑے پہن لیے ٗ گھروں میں الیکٹرک ہیٹروں کے جلانے کا رواج ہوگیا محکمہ شہری دفاع کے مطابق شہری بلاوجہ گھروں سے باہر نہ نکلیں اور گرم کپڑوں کا استعمال ضرور کریں ٗ گھروں میں سردی کی شدت کم کرنے کے لیے الیکٹرک ہیٹر کا استعمال انتہائی احتیاط کے ساتھ کریں تا کہ کسی نا خوشگوار صورتحال سے بچا جا سکے 


مصر ٗمقامی عدالت نے اسلام کی توہین کے الزام میں سرکردہ خاتون صحافی اور مصنفہ فاطمہ ناعوت کو تین سال قید کی سزا سنادی 

قاہرہ ۔28جنوری (فکروخبر/ذرائع)مصر کی ایک مقامی عدالت نے اسلام کی توہین کے الزام میں سرکردہ خاتون صحافی اور مصنفہ فاطمہ ناعوت کو تین سال قید اور 20 ہزار مصری پاؤنڈ جرمانے کی سزا سنادی ٗ کیس خصوصی عدالت کو بھجوا دیا گیا عدالت نے ناعوت کے وکیل محمد عفیفی کی موجودگی میں مقدمہ کا فیصلہ سنایا۔ ناعوت پر اسلام کی توہین اور سوشل میڈیا پر عدالت کی توہین کا بھی الزام عائد کیا گیا ہے۔قبل ازیں مصر کے السیدہ زینب پراسیکیوشن کی جانب سے ناعوت کا کیس الجنح کی ایک مقامی عدالت کو بھجوایا گیا تھااس پر مبینہ طور پر اسلام کی توہین اور’فیس بک‘‘ پر شعائر اسلام پر تنقید کا الزام عائد کیا گیا تھا۔


فلسطین میں شدید بارشیں ٗ شہریوں کی پریشانی میں اضافہ 

پولٹری فارم میں پانی جمع ہونے سے کئی مرغیاں ہلاک ہوگئیں 

مقبوضہ بیت المقدس۔28جنوری (فکروخبر/ذرائع)فلسطین میں شدید بارشوں کے سبب شہریوں کی پریشانی میں اضافہ ہوگیا ٗپولٹری فارم میں پانی جمع ہونے سے کئی مرغیاں ہلاک ہوگئیں ۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق فلسطین کی غزہ پٹی کے مختلف علاقوں میں بارشوں کے بعد نکاسی آب کا ناقص انتظام ہونے کی وجہ سے جگہ جگہ گندہ پانی جمع ہوگیا ٗشہریوں کو شدید دشواری کا سامنا کرناپڑ ا ٗجنوبی علاقے رفاہ میں بارش کا پانی پولٹری فارم میں بھرجانے کے سبب درجنوں مرغیاں ہلاک ہوگئیں ٗ ادھر مغربی کنارے کے علاقے رام اللہ میں ہلکی برفباری سے موسم خوشگوار ہوگیا ۔