dushwari

خلیجی ممالک میں باہمی کشیدگی کم کرنے کی کوششیں تیز

دبئی ۔31؍مئی۔(فکروخبر/ذرائع)قطر اور بعض دوسرے خلیجی ملکوں کے درمیان حالیہ کشیدگی کے بعد عرب اور خلیجی سطح پر دوحہ حکومت کو سخت دباؤ کا سامنا ہے۔ اسی اثناء میں یہ اطلاعات بھی سامنے آئی ہیں کہ امیر قطر آج بدھ کو خصوصی دورے پر کویت پہنچ رہے ہیں۔ ان کے دورہ کویت کا مقصد خلیجی ملکوں کے ساتھ پائی جانے والی کشیدگی کم کرنے کے لیے کویت کے ساتھ بات چیت کرنا اور کویت کی ثالثی کی کوششوں کو آگے بڑھانا ہے۔العربیہ ٹی وی چینل کے مطابق دورہ کویت کے بعد امیر قطر سلطنت اومان بھی جائیں گے۔خیال رہے کہ امیر قطر ایک ایسے وقت میں کویت کے دورے پر روانہ ہو رہےہیں جب کویتی حکومت کی طرف سے قطر اور دوسرے خلیجی ملکوں کے درمیان پائی جانے والی کشیدگی دور کرنے کے لیے مصالحتی کردار ادا کرنے کی پیش کش کی گئی ہے۔ذرائع ابلاغ کے مطابق امیر قطر چند گھنٹے تک کویتی قیادت سے بات چیت کریں گے۔امیر قطر اور کویتی قیادت کے درمیان ہونے والی بات چیت میں خلیجی ملکوں کے درمیان پائی جانے والی کشیدگی سب سے اہم موضوع ہوگا۔

سعودی عرب:30مئی(فکروخبر/ذرائع)سعودی عرب کے مفتی اعظم الشیخ عبدالعزیز آل الشیخ نے روزہ افطار کرانے والے حضرات کوخبردار کیا ہے کہ وہ افطاری میں فضول خرچی سے سختی سے اجتناب کریں کیونکہ اسراف تقویٰ کے خلاف ہے۔العربیہ کے مطابق اپنے ایک بیان میں سعودی مفتی اعظم نے کہا کہ ماہ صیام کے دوران مخیر حضرات روزہ داروں کی افطاری، سحری اور انہیں انواع اقسام کے کھانے کھلانے میں سبقت لے جانے کی کوشش کرتے ہیں۔ حرمین شریفین کی زیارت کے لیے آنے والے اللہ کے مہمانوں کی افطاری اور ضیافت بلا شبہ بڑے اجرو ثواب کا کام ہے مگر بہت سے لوگ افطاری میں اسراف سے کام لیتے ہیں۔

مدینہ منورہ۔ 29 مئی (فکروخبر/ذرائع)"العربیہ " کی ٹیم نے مدینہ منورہ میں واقع "بئرِ رومہ" کا دورہ کیا جو "بئرِ عثمان" کے نام سے مشہور ہے۔ 1400 برس پہلے دامادِ رسول اور خلیفہ سوم حضرت عثمان بن عفان رضی اللہ عنہ نے اس کنوئیں کو خرید کر قیامت تک کے لیے مسلمانوں کے واسطے وقف کر دیا تھا۔اس کنوئیں کے پانی سے آج بھی ملحقہ باغِ عثمان کو سیراب کیا جاتا ہے۔ یہ باغ سعودی وزارت زراعت کے زیرِ نگرانی ہے جس کی وجہ سے انتہائی اہمیت کے حامل ہونے کے باوجود زائرین کو اس مقام میں داخل ہونے میں دشواری پیش آتی ہے۔