dushwari

متحدہ عرب امارات:انتخابات میں حصہ لینےکے اعلان کے بعدمصرکے سابق وزیراعظم کوملک بدرکردیاگیا

قاہرہ:04نومبر2017(فکروخبر /ذرائع)متحدہ عرب امارات کے حکام نے گزشتہ روزمصرکے سابق وزیراعظم وصدارتی امیدواراحمدشفیق کوملک بدرکردیاہے جوکہ 2012ء امارات میں رہائش پذیرتھا۔ان کے دوساتھیوں نے فرانسیسی خبررساں ادارے کوبتایاہے کہ یہ اقدام اس وقت سامنے آیا ہے جب اس نے آنے والے انتخابات میں حصہ لینے کااعلان کیا۔ائیرپورٹ کے ایک عہدیدارکاکہناہے کہ احمدشفیق ہفتہ کی شام قاہرہ ائیرپورٹ پراترے اورایک نامعلوم مقام کی طرف فوری طورپرروانہ ہوگئے۔

ان کے رشتہ داروں نے اے ایف پی کوبتایاکہ آمدکے بعد6گھنٹوں تک انہیں اس کی محل وقوع کے حوالے سے کچھ معلوم نہیں تھا۔یہ اقدام چند دنوں بعدآیاجب شفیق نے اگلے سال کے انتخابات میں امیدواربننے کااعلان کیااورپھرکہاکہ انہیں ملک چھوڑنے سے روکاجارہاہے۔جس سے اس کے میزبان اماراتی حکام کوناگواری گزری۔متحدہ عرب امارات کی سرکاری خبررساں ایجنسی وام نے رپورٹ دی تھی کہ شفیق مصرکیلئے روانہ ہوگئے ہیں جبکہ ان کاخاندان پیچھے قیام پذیرہے تاہم یہ ذکرنہیں کیاگیاکہ انہیں ملک بدرکیاگیاہے۔شفیق ،جوکہ سابق آرمی جرنیل ہیں اورحسنی مبارک نے انہیں وزیراعظم مقررکیاتھا،2012ء میں اسلام پسندمحمدمرسی سےشکست کا سامنا کر نا پڑاتھا,

    ان کے ایک ساتھی کاکہناہے کہ انہوں نے ان کی ابوظہبی رہائشگاہ پرحکام کوآتے دیکھاہے اورانہیں بتایاگیاکہ شفیق کوایک نجی طیارے پرمصربدرکردیاجائے گاجوصدرابوالفتح السیسی کاانتخابات میں مقابلہ کرے گا۔خاتون ساتھی نے کہاحکام اسے گھرسے لے گئے اورنجی طیارے پربٹھادیا،ان کاکہناتھاکہ شفیق قاہرہ واپس جائیں گے کیونکہ وہ اسے صرف ان کے اپنے ہی ملک بدرکرسکتے ہیں۔ایک دوسرے ساتھی نے اے ایف پی کوتصدیق کی ہے کہ انہیں قاہرہ بدرکردیاجائے گااوران کے وکیل دیناعدلے نے فیس بک پرلکھاکہ شفیق کوگرفتارکردیاگیاہے تاکہ انہیں وطن واپس بھیجاجاسکے۔