dushwari

یمنی بندرگاہیں اور ہوائی اڈے 24 گھنٹوں میں کھولنے کا اعلان

باغیوں کے زیرتسلط ہوائی اڈے اور بندرگاہیں بدستور بند رہیں گی، المعلمی 

نیو یارک ۔14نومبر2017(فکروخبر/ذرائع )اقوام متحدہ میں سعودی عرب کے سفیر عبد اللہ المعلمی نے اپنے ملک کی جانب سے یمن کی آئینی حکومت کی بھرپور مدد جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ یمن کی دستوری حکومت کی رٹ والے علاقوں میں تمام ہوائی اڈے اور بندرگاہیں چوبیس گھنٹوں کے اندر اندر کھول دی جائیں گی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق قوام متحدہ میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سعودی سفیر نے کہا کہ یمن بندرگاہوں پر مانیٹرنگ کے اقدامات میں چھوٹی اور درمیانے درجے کی کشیتاں شامل نہیں تھیں جس کے نتیجے میں اسلحہ کی اسمگلنگ کی جاتی رہی ہے۔ عرب اتحاد یمنی عوام تک انسانی امداد کی رسائی میں کسی قسم کی رکاوٹ برداشت نہیں کرے گا۔عبداللہ المعلمی نے اقوام متحدہ سے یمنی باغیوں کے زیرتسلط بندرگاہوں کی نگرانی کے لیے عالمی مبصرین تعینات کرنے کا مطالبہ کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب یمنی باغی ملیشیا تک اسلحہ کی رسائی روکنے کے لیے ہر ممکن اقدام کرے گی۔ انہوں نے الحدیدہ بندرگاہ پر اسلحہ کی اسمگلنگ روکنے کے لیے چھان بین کا نیا میکینزم اختیار کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔