dushwari

دھند کی وجہ سے ٹرینوں میں ہونے والی تاخیرگذشتہ4 سالوں میں سب سے بدتر

پٹنہ:12؍جنوری2018(فکروخبر/ذرائع)اس موسم سرما کے موسم کے دوران دھندکے قہر کے بعد پہلے 15 دن کی صورتحال بہت خراب ہے۔ اسے دیکھتے ہوئے ایسالگ رہا ہے کہ دھند کے موجودہ سیزن میں ٹرینوں کے تاخیر سے چلنے کی صورتحال گذشتہ 4 سالوں سے زائدبدتر ہے۔ ٹرین مسافروں کی باتوں کے مطابق ریل یاتری کے ذریعہ اکٹھا کئے گئے لائیو ٹرین ٹریکنگ ڈیٹا کے مطابق یہ اندازہ لگایا جارہا ہے ۔شمالی ہندوستان میں آنے والے دنوں میں درجہ حرارت کے مزید کم ہونے کا اندیشہ ہے۔

اسی کے ساتھ حالات کے جلد ہی سدھرنے کے کوئی آثار نہیں نظر آرہے ہیں۔ریل یاتری نے اپنے تمام مسافروں کے لئے ایک خاص اڈوائزری جاری کی ہے، جس میں دھند سے سب سے زیادہ متاثر ٹرینوں پر اسپیشل الرٹس شامل ہیں۔ریل یاتری کے ذریعہ ٹریک کئے گئے ڈیلے انڈیکس کے مطابق، دھند کا یہ موسم دسمبر 2017 کے گزشتہ 15 دنوں میں 87 منٹ کا رہا ہے۔ملک کے شمالی حصے میں دھندکا روایتی موسم ابھی آنا باقی ہے اور یہ حالات کافی بدتر ہے۔ عام طور پر دھند کا پیک موسم 15 دسمبر اور 15 جنوری کے درمیان رہتا ہے۔ گزشتہ تین سالوں میں، ریل یاتری کے ذریعہ شائع نیشنل ٹرین ڈیلے انڈیکس مندرجہ ذیل رہے ہیں۔72 منٹ (2014-15)، 47 منٹ (2015-16)، 96 منٹ (2016-17) منٹ۔ حالانکہ دھند سے زبردست سردیوں کا موسم عام طور پرملک کے شمالی حصے میں رہتا ہے، لیکن اس کا اثر پورے ہندوستان میں ٹرینوں میں تاخیر کے طور پر نظر آتا ہے۔

Urdu-Arabic-Keybaord11

ISLAMIC-MESSAGES